ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بی جے پی رکن پارلیمنٹ کی بیوی نے مسلم خواتین کے ساتھ ہمدردی کرنے سے متعلق اٹھایا یہ بڑا سوال

سجاتا منڈل خان نے کہا کہ شادی شدہ زندگی الگ ہوتی ہے اور سیاسی زندگی الگ ہے، مگر میری سیاسی زندگی کی وجہ سے طلاق دے دیا جائے تو اس سے زیادہ افسوس کی بات کیا ہوسکتی ہے۔ وہ لوگ کہاں ہیں، جو خواتین کی عزت اور وقار کی بات کرتی ہے۔

  • Share this:
بی جے پی رکن پارلیمنٹ کی بیوی نے مسلم خواتین کے ساتھ ہمدردی کرنے سے متعلق اٹھایا یہ بڑا سوال
بی جے پی رکن پارلیمنٹ کی بیوی نے مسلم خواتین کے ساتھ ہمدردی کرنے سے متعلق اٹھایا یہ بڑا سوال

کولکاتہ: بی جے پی چھوڑ کر ترنمول کانگریس میں شامل ہونے والی بی جے پی کی رکن پارلیمنٹ سومترا خان کی اہلیہ سجاتا منڈل نے آج اپنے شوہر کے ذریعہ طلاق دیئے جانے کے اعلان پرتنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف بی جے پی مسلم خواتین کی ہمدرد ہونے کا دعویٰ کرتی ہے کہ اور تین طلاق پر پابندی کا کریڈٹ لیتی ہے، مگر دوسری طرف بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ صرف اس وجہ سے مجھے طلاق دینے کا میڈیا کے ذریعہ اعلان کردیا کہ میں نے ترنمول کانگریس میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

سجاتا منڈل نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ وزیر اعظم مودی اور بی جے پی کی مرکزی قیادت اس پر نوٹس لیں گے۔ سجاتا منڈل نے کہا کہ گرچہ میں خاتون ہوں اور بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ سومترا خان کی اہلیہ ہوں، مگر میری اپنی بھی ایک شخصیت ہے۔ میری بھی اپنی رائے میں اپنی مرضی سے آزادانہ ماحول میں سانس لینے کے لئے ترنمول کانگریس میں شامل ہوئی ہوں۔ مگر صرف اس وجہ سے میرے شوہر نے برسر عام طلاق دینے کا اعلان کردیا ہے۔ جبکہ میں ترنمول کانگریس میں شامل ہوتے وقت بھی اپنے ماتھے پر سندور جو ایک شادی شدہ خاتون کا سنگھا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میری شادی محبت میں ہوئی تھی اور شادی کے بعد میرے شوہر نے تحفہ میں بالا دیا تھا، جسے میں پہنے ہوئی تھی۔


سجاتا منڈل نے کہا کہ گرچہ میں خاتون ہوں اور بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ سومترا خان کی اہلیہ ہوں، مگر میری اپنی بھی ایک شخصیت ہے۔
سجاتا منڈل نے کہا کہ گرچہ میں خاتون ہوں اور بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ سومترا خان کی اہلیہ ہوں، مگر میری اپنی بھی ایک شخصیت ہے۔


سجاتا منڈل خان نے کہا کہ شادی شدہ زندگی الگ ہوتی ہے اور سیاسی زندگی الگ ہے، مگر میری سیاسی زندگی کی وجہ سے طلاق دے دیا جائے تو اس سے زیادہ افسوس کی بات کیا ہوسکتی ہے۔ وہ لوگ کہاں ہیں، جو خواتین کی عزت اور وقار کی بات کرتی ہے۔ دوسری جانب ترنمول کانگریس میں شامل ہونے کے بعد سجاتا منڈل کو ریاستی حکومت نے سیکورٹی فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاستی محکمہ داخلہ کے ذرائع نے بھی اس کی تصدیق کی ہے کہ سجاتا منڈل کے ساتھ تین سیکورٹی جوان ساتھ میں رہیں گے۔ تینوں سیکورٹی کے پاس پستول ہوں گے۔ سجاتا منڈل جلد ہی عوامی جلسے کریں گی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 23, 2020 09:15 PM IST