پرنسپل سکریٹری کے دفتر پر چھاپہ کا معاملہ : سی بی آئی کو سپریم کورٹ نے بھیجا نوٹس

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار کے دفتر پر چھاپے کے معاملے میں ریاستی حکومت کی اپیل پر مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) سے آج جواب طلب کیا۔

Mar 04, 2016 05:22 PM IST | Updated on: Mar 04, 2016 05:22 PM IST
پرنسپل سکریٹری کے دفتر پر چھاپہ کا معاملہ : سی بی آئی کو سپریم کورٹ نے بھیجا نوٹس

نئی دہلی:  سپریم کورٹ نے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کے پرنسپل سکریٹری راجندر کمار کے دفتر پر چھاپے کے معاملے میں ریاستی حکومت کی اپیل پر مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) سے آج جواب طلب کیا۔

جسٹس رنجن گوگوئی کی صدارت والی بنچ نے دہلی ہائی کورٹ کے فیصلے کو چیلنج کرنے والی ریاستی حکومت کی درخواست پر مختصر سماعت کے دوران سی بی آئی کو نوٹس جاری کیا۔

دہلی حکومت نے اپنی درخواست میں ہائی کورٹ کے فیصلے پر روک لگانے اور مسٹر کمار کے دفتر پر چھاپے میں ضبط فائلوں واپس کرنے کا سی بی آئی کو ہدایات دینے کی درخواست کی ہے۔ ہائی کورٹ نے فائلوں کو سی بی آئی کے پاس رہنے دینے کا حکم دیا تھا۔

واضح رہے کہ مسٹر کمار کے آفس پر چھاپے کے معاملے میں سی بی آئی نے وضاحت جاری کی تھی۔ مسٹر کیجریوال اور ان کی حکومت کے وزراء کی جانب سے لگائے گئے الزامات کے درمیان سی بی آئی نے واضح کیا تھا کہ چھاپہ ماری میں وہی دستاویزات ضبط کئے گئے جو اسے چاہئے تھے۔

Loading...

Loading...