راہل گاندھی کو بڑی راحت، ’چوکیدار چور ہے‘ والے بیان پر توہین عدالت کا معاملہ سپریم کورٹ نے کیا ختم

بی جے پی رکن پارلیمنٹ میناکشی لیکھی کی طرف سے دائر عرضی میں راہل گاندھی پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے نریندر مودی پر نشانہ سادھنے کے لئے رافیل سودا معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو غلط طریقے سے لوگوں کے سامنے پیش کرنے کی کوشش کی۔

Nov 14, 2019 11:44 AM IST | Updated on: Nov 14, 2019 12:33 PM IST
راہل گاندھی کو بڑی راحت، ’چوکیدار چور ہے‘ والے بیان پر توہین عدالت کا معاملہ سپریم کورٹ نے کیا ختم

راہل گاندھی: فائل فوٹو

نئی دہلی۔  سپریم کورٹ نے کانگریس لیڈر راہل گاندھی کو توہین عدالت کے معاملہ میں راحت دے دی ہے۔ اسی کے ساتھ کورٹ نے راہل گاندھی کا معافی نامہ منظور کر لیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ راہل گاندھی کا بیان بدبختانہ ہے۔ عدالت عظمیٰ نے کہا کہ راہل گاندھی کو بیان دیتے وقت محتاط رہنا چاہئے۔ راہل گاندھی پر الزام تھا کہ انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی پر نشانہ سادھنے کے لئے رافیل سودا معاملہ پر عدالت کے فیصلے کو توڑ مروڑ کر پیش کیا جس سے عدالت کی توہین ہوئی ہے۔

Loading...

نئی دلی سے بی جے پی رکن پارلیمنٹ میناکشی لیکھی کی طرف سے دائر عرضی پر سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا دیا ہے۔ اس عرضی میں راہل گاندھی پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے نریندر مودی پر نشانہ سادھنے کے لئے رافیل سودا معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو غلط طریقے سے لوگوں کے سامنے پیش کرنے کی کوشش کی۔ راہل گاندھی نے رافیل معاملہ کو جس طرح سے لوک سبھا الیکشن کے وقت غلط طریقے سے پیش کیا اس سے عدالت کی توہین ہوئی ہے۔

Loading...