ہوم » نیوز » وطن نامہ

آسام این آرسی: عدالت عظمیٰ کا حکم، این آرسی پر25 ستمبرسے شروع ہودعویٰ اعتراض

  • Share this:
آسام این آرسی: عدالت عظمیٰ کا حکم، این آرسی پر25 ستمبرسے شروع ہودعویٰ اعتراض
سپریم کورٹ : فائل فوٹو۔

آسام این آرسی معاملے پرسماعت کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے 25 ستمبر سے دعویٰ اعتراض  درج کرنے کا حکم دیا ہے۔ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق قومی شہری رجسٹرار (این آرسی)  کے دوسرے مسودے سے باہرہونے والے شہری 25 ستمبرسے 60 دنوں تک اپنی شہریت ثابت کرسکتے ہیں۔


ساتھ ہی سپریم کورٹ نے شہریوں کوراحت دیتے ہوئے کہا کہ وہ 15 دستاویزات میں سے 10 دستاویزات کودکھا سکتے ہیں۔ اس معاملے میں این آرسی کوآرڈینیٹردیگر پانچ پراپنی رائے قائم کرسکتے ہیں۔ سپریم کورٹ نے واضح کیا ہے کہ اگردستاویزات میں کمی پائی جاتی ہے تویہ ضروری نہیں ہے کہ اس شہری کودوسرا موقع دیا جائے۔


سپریم کورٹ نے معاملے کی اگلی سماعت 23 اکتوبرمتعین کی ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ این آرسی کوآرڈینیٹراس معاملے سے متعلق خفیہ اطلاعات مرکزی حکومت سے شیئرنہیں کرسکتی ہے۔ این آرسی کوآرڈینیٹراس معاملے سے متعلق کوئی بھی اطلاع میڈیا یا پھرعوامی طورپرشیئرنہیں کرے گی۔


یہ بھی پڑھیں:   این آر سی سے باہر ہوئے لوگ کہیں چلے نہ جائیں دوسری ریاست، بایومیٹرک ڈاٹا سے کیا جائے گا ٹریک

واضح رہے یہ قومی شہریت رجسٹرارکا دوسرا مسودہ 30 جولائی کو شائع کیا گیا تھا، جس میں 3.29 کروڑ لوگوں میں سے 2.89 کروڑ لوگوں کے نام شامل کئے گئے تھے۔ اس مسودے میں 40 ,70,707 لوگوں کے نام نہیں تھے۔ ان میں سے  630 ,37,59  لوگوں کے نام نامنظورکردیئے تھے جبکہ 077 ,2,48 نام زیرالتوا رکھے گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:   آسام کے این آر سی میں 2.90 کروڑ لوگ پائے گئے جائز شہری، پڑھیں خاص باتیں

عدالت عظمیٰ نے 31 جولائی کو واضح کیا تھا کہ جن لوگوں کے نام این آرسی کے مسودے میں شامل نہیں ہیں، ان کے خلاف اتھارٹی کسی طرح کی مجرمانہ کارروائی نہیں کرے گی کیونکہ یہ بھی صرف مسودہ ہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    آسام شہریت معاملہ: سپریم کورٹ میں پانچ معاملوں پرشروع ہوئی سماعت، مولانا ارشد مدنی نےعدالت کے موقف کوبتایا خوش آئند

یہ بھی پڑھیں:   آسام: این آر سی کے مسودے میں الفا عسکریت پسند کا نام، رکن پارلیمنٹ کا نام غائب

 

 
First published: Sep 19, 2018 05:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading