ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

خاتون کو سسرال میں لگی چوٹ کیلئے شوہر ہوگا ذمہ دار : سپریم کورٹ

سپریم کورٹ سے پہلے اس معاملہ میں پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ نے بھی خاتون کے ساتھ مار پیٹ کے ملزم شوہر کو پیشگی ضمانت دینے سے انکار کردیا تھا ۔

  • Share this:
خاتون کو سسرال میں لگی چوٹ کیلئے شوہر ہوگا ذمہ دار : سپریم کورٹ
خاتون کو سسرال میں لگی چوٹ کیلئے شوہر ہوگا ذمہ دار : سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے پیر کو اس شخص کی پیشگی ضمانت کی عرضی خارج کردی ، جس پر اپنی ہی بیوی سے مار پیٹ کا الزام ہے ۔ سپریم کورٹ نے عرضی کو خارج کرتے ہوئے کہا کہ بیوی کو کسی بھی طرح کی چوٹ کیلئے خود شوہر ہی ذمہ دار ہوگا ۔ چیف جسٹس ایس اے بوبڈے کی قیادت والی بینچ نے کہا کہ سسرال میں خاتون پر بھلے ہی کسی دیگر رشتہ دار نے حملہ کیا ہو ، لیکن اس کی ابتدائی ذمہ داری شوہر پر ہوگی ۔


سپریم کورٹ جس معاملہ کی سماعت کررہا ہے ، اس میں مرد کی یہ تیسری شادی ہے اور خاتون کی دوسری ۔ شادی کے ایک سال بعد 2018 میں جوڑے کو ایک بچہ پیدا ہوا ۔ گزشتہ سال جون میں خود پر مبینہ حملے کے بعد خاتون نے لدھیانہ پولیس میں اپنے شوہر ، سسر اور ساس کے خلاف شکایت درج کرائی تھی ۔ خاتون نے الزام لگایا تھا کہ اس کے سسرال والے مزید جہیز کا مطالبہ کررہے ہیں ۔


سپریم کورٹ میں چیف جسٹس آف انڈیا شرد اروند بوبڈے کی بینچ کے سامنے خاتون کے شوہر کے وکیل کشاگر مہاجن پیشگی ضمانت پر بضد تھے ۔ اس پر چیف جسٹس کی صدارت والی بینچ نے کہا کہ آپ کس طرح کے شخص ہیں ؟ خاتون نے الزام لگایا ہے کہ آپ اس کا گلا دبا کر قتل کرنے والے تھے ۔ اس نے الزام لگایا کہ آپ نے اسقاط حمل کیلئے مجبور کیا ۔ آپ کس طرح کے شخص ہیں کہ اپنی بیوی کی پٹائی کرنے کیلئے کرکٹ بلے کا استعمال کرتے ہیں ؟


اس پر مہاجن نے کہا کہ خاتون نے شوہر کے والد پر الزام لگایا ہے کہ اس نے بلے کا استعمال کیا ، جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ آپ ( شوہر ) یا آپ کے والد نے مبینہ طور پر مار پیٹ کرنے کیلئے بلے کا اسعتمال کیا ۔ جب کسی خاتون کو سسرال میں چوٹ لگتی ہے تو ابتدائی ذمہ داری شوہر کی ہے ۔ اس کے بعد بینچ نے شوہر کی عرضی خارج کردی ۔

بتادیں کہ اس سے پہلے پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ نے بھی شوہر کو پیشگی ضمانت دینے سے انکار کردیا تھا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 09, 2021 07:59 AM IST