ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

عیدالاضحیٰ سے متعلق کووڈ ضوابط میں نرمی پر کیرل حکومت سے سپریم کورٹ نے طلب کیا جواب

سپریم کورٹ نے کیرلا حکومت سے عیدالاضحیٰ کے پیش نظر کووڈ-19 سے متعلق عائد پابندی میں نرمی دینے کے خلاف دائر درخواست پر آج جواب داخل کرنے کو کہا ہے۔

  • Share this:
عیدالاضحیٰ سے متعلق کووڈ ضوابط میں نرمی پر کیرل حکومت سے سپریم کورٹ نے طلب کیا جواب
عیدالاضحیٰ سے متعلق کووڈ ضوابط میں نرمی پر کیرل حکومت سے سپریم کورٹ نے طلب کیا جواب

کے مراکز نئی دہلی: سپریم کورٹ نے کیرلا حکومت سے عیدالاضحیٰ کے پیش نظر کووڈ-19 سے متعلق عائد پابندی میں نرمی دینے کے خلاف دائر درخواست پر آج جواب داخل کرنے کو کہا ہے۔ عیدالاضحیٰ (بقرہ عید) سے پہلے پابندیوں میں نرمی دینے کے کیرل حکومت کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں ایک عرضی دائر کی گئی ہے۔ یہ نرمی ایسے وقت میں دی گئی ہے، جب ریاست میں کووڈ معاملوں اور کورونا کے مثبت معاملات میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ سپریم کورٹ اس معاملے کی سماعت کل کرے گا۔


واضح رہے کہ کیرلا میں 21 جولائی کو عیدالاضحیٰ کے پیش نظر کووڈ-19 سے متعلق پابندیوں میں نرمی برتنے کے حکومت کے فیصلے کی اتوار کو اپوزیشن جماعت کانگریس اور ہندوستانی میڈیکل ایسوسی ایشن (آئی ایم اے) نے تنقید کی۔ آئی ایم اے نے حکومت کے فیصلے کو قانونی چیلنج دینے کی وارننگ دی ہے۔ کانگریس کے قومی ترجمان ابھیشیک منو سنگھوی نے ٹوئٹ کیا کہ اگر کانوڑ یاترا غلط ہے، تو عیدالاضحیٰ پر پابندی میں نرمی دینا بھی غلط ہے۔ حکومت ایسے ریاستوں میں جو فی الحال کووڈ-19 کے مراکز میں شمار ہے۔


ابھیشیک منو سنگھوی نے ٹوئٹ کیا، ’کیرلا حکومت کے ذریعہ عیدالاضحیٰ تیوہار کے لئے تین دنوں کی چھوٹ فراہم کرنا قابل مذمت ہے کیونکہ ریاست فی الحال کووڈ-19 کے مراکز میں سے ایک ہے۔ اگر کانوڑ یاترا غلط ہے تو بکری پر عوامی تقریب تقریب کی چھوٹ دینا بھی غلط ہے’۔ وہیں آئی ایم اے نے اتوارکو کیرلا حکومت سے اس فیصلے کو واپس لینے کی گزارش کرتے ہوئے اسے میڈیکل ایمرجنسی کے وقت ’غیر ضروری‘ اور ’نامناسب‘ بتایا۔


 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 19, 2021 12:43 PM IST