ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیرسےدفعہ370کی منسوخی : سپریم کورٹ میں سماعت آج

جموں کشمیرسےدفعہ370کی منسوخی کےتعلق سےآج سپریم کورٹ میں سماعت ہے

  • Share this:
جموں وکشمیرسےدفعہ370کی منسوخی : سپریم کورٹ میں سماعت آج
علامتی تصویر:نیوز18

جموں کشمیرسےدفعہ370کی منسوخی کےتعلق سےآج سپریم کورٹ میں سماعت ہے۔ دراصل وادی کے حالات پر مختلف عرضی گذاروں نے درخواست داخل کررکھی ہے۔دفعہ370کی منسوخی کے بعد کشمیر میں پابندیوں سے متعلق21 نومبرکوسپریم کورٹ میں سماعت ہوئی۔ عرضی گذار کی وکیل میناکشی اروڑہ نے عدالت کوبتایا کہ جموں کشمیر کے حالات اب بھی خراب ہیں، پبلک ٹرانسپورٹ پوری طرح بحال نہیں ہوا ہے اور موبائیل سروسس کو بھی مکمل بحال نہیں کیاگیا ہے۔


فائل فوٹو ۔ اے پی ۔


اس موقع پرعدالت نے جموں وکشمیرانتظامیہ کوہرسوال کاجواب دینے کی ہدایت دی۔ وہیں سالیسیٹرجنرل تشارمہتا نے کہا کہ جموں کشمیر کے حالات میں لگاتار سدھارہورہا ہے۔ جبکہ سالیسیٹرجنرل نے 1990 کےتشددکاحوالہ دیتے ہوئے کہاتھا کہ دفعہ370 پرحتمی فیصلہ کرناضروری تھا۔یادرہے کہ تشارمہتا نے کہا تھا کہ جموں کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ ختم کرنے کے بعد وہاں ویسے عوامی بنیادی 106 قانون مؤثر ہو گئے ہیں، جو وہاں خصوصی ریاست کے درجہ کے تحت لاگو نہیں تھے۔ انہوں نے کہا، ’’جموں و کشمیر میں ہسپتالوں اور عوامی مقامات کے تمام ویڈیو دکھایا جا سکتا ہے، جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ وہاں حالات معمول ہوئے ہیں‘‘۔ سالیسٹر جنرل نے کہا کہ لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانا حکومت کی سب سے بڑی ترجیح ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک نہ صرف سرحد پار دہشت گردی کا شکار ہے، بلکہ اس دہشت گردی کو وادی کے کچھ مقامی علیحدگی پسند لوگوں کی طرف سے شہہ بھی ملتی رہی ہے۔


سپریم کورٹ: فائل فوٹو

تشارمہتا نے دلیل دی تھی کہ جموں و کشمیر کے مرکز کے زیر انتظام صوبہ بننے کے بعد مقامی لوگوں کو اس کے فوائد ملنے والے ہیں۔ عدالت کو نہ صرف کچھ لوگوں کی اظہار کی آزادی کی حفاظت کرنی ہے، بلکہ یہ بھی یقینی بنانا ہے کہ ایک بڑی تعداد کے بنیادی حقوق بھی محفوظ رہے۔ سالیسٹر جنرل نے کہا کہ انہیں نہیں معلوم کہ درخواست گزارکشمیر کی ایسی تصویرکیوں پیش کررہے ہیں؟ سالیسٹر جنرل نے مزید کہا کہ جموں و کشمیر میں اس سے پہلے تعلیم کا حق لاگو نہیں تھا، لیکن ایک بھی آدمی عدالت سے یہ مطالبہ نہیں آیا کہ ریاست کے بچوں کے لئے تعلیم کا حق لاگو کرایا جائے۔ کئی بارعدالت کے سامنے غلط معلومات پیش کرگمراہ کیا جاتا ہے۔
First published: Nov 25, 2019 09:31 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading