உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بڑی خبر: لوک سبھا میں تعطل ختم، کانگریس کے 4 اراکین پارلیمنٹ کی معطلی واپس

    Parliament Monsoon Session: لوک سبھا سے معطل ہوئے اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔ لوک سبھا میں اپوزیشن کے ساتھ اتفاق کے بعد معطلی ختم کرنے کے لئے تجویز لائی گئی تھی۔ اسی کے ساتھ لوک سبھا سے معطل اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔

    Parliament Monsoon Session: لوک سبھا سے معطل ہوئے اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔ لوک سبھا میں اپوزیشن کے ساتھ اتفاق کے بعد معطلی ختم کرنے کے لئے تجویز لائی گئی تھی۔ اسی کے ساتھ لوک سبھا سے معطل اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔

    Parliament Monsoon Session: لوک سبھا سے معطل ہوئے اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔ لوک سبھا میں اپوزیشن کے ساتھ اتفاق کے بعد معطلی ختم کرنے کے لئے تجویز لائی گئی تھی۔ اسی کے ساتھ لوک سبھا سے معطل اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: لوک سبھا سے معطل ہوئے اراکین پارلیمنٹ کی معطلی ختم ہوگئی ہے۔ لوک سبھا میں اپوزیشن کے ساتھ اتفاق کے بعد معطلی ختم کرنے کے لئے تجویز لائی گئی تھی۔ اسی کے ساتھ لوک سبھا سے معطل اراکین پارلیمنٹ کا سسپنشن ختم ہوگیا۔

      جولائی کے آخر میں پارلیمنٹ میں پلے کارڈ دکھانے کے سبب کانگریس کے چار اراکین پارلیمنٹ کو لوک سبھا سے پورے سیشن کے لئے معطل کردیا گیا تھا، جن چار اراکین پارلیمنٹ کو معطل کیا گیا تھا، وہ منیکم ٹیگور، ٹی این پرتاپن، جوتھمنی اور رامیا ہری داس ہیں۔ لوک سبھا میں مختلف موضوعات پر ہنگامے کے دوران تختیاں دکھاکر احتجاج کرنے اور آسن کی توہین کرنے کے معاملے میں 25 جولائی کو کانگریس کے ان چار اراکین کو جاری سیشن کی باقی مدت کے لئے ایوان کی کارروائی سے معطل کر دیا گیا تھا۔

      اسپیکر نے کہی یہ بات

      ان اراکین کی معطلی واپس لئے جانے سے پہلے لوک سبھا اسپیکر نے کہا کہ ایوان کی رضامندی سے وہ یہ سہولت دے رہے ہیں کہ اب کوئی بھی اراکین آسن کے پاس اور آسن کے سامنے تختیاں لے کر نہیں آئے گا۔

      اس سے قبل پارلیمانی امور کے وزیر پرہاد جوشی نے کہا کہ اپوزیشن کو یہ بھروسہ دلانا چاہئے کہ اس کے اراکین ایوان میں تختیاں لے کر نہیں آئیں گے اور آسن کے سامنے تختیاں نہیں لہرائیں گے۔ لوک سبھا اسپیکر اوم برلا نے کہا ‘گزشتہ دنوں ایوان میں ہوئے حادثات نے ہم سب کو مایوس کیا ہے۔ مجھے بھی تکلیف ہوئی ہے اور ملک کے عوام کو بھی تکلیف پہنچی ہے‘۔

      ہنگامہ آرائی پر پیوش گوئل کی ناراضگی

      پارلیمنٹ میں ہنگامہ آرائی سے متعلق مرکزی وزیر تجارت و صنعت پیوش گوئل نے ناراضگی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے ایوان میں اطمینان دلایا ہے کہ کل دوپہر راجیہ سبھا میں مہنگائی پر بحث ہوگی۔ اس کے بعد بھی اپوزیشن ایک پلیٹ فارم پر نہیں آرہا ہے۔ ان کے دل میں خدشہ ہے کہ حوکمت کے کام سامنے آئیں گے اور کیسے اپوزیشن نے مہنگائی سے متعلق کوئی ٹھوس قدم نہیں اٹھائے۔ حکومت پہلے دن سے مہنگائی پر بحث کرنے کے لئے تیار ہے۔ وزیر خزانہ کو کورونا ہوا تھا، ان کے ٹھیک ہونے کے بعد سے ہم اپوزیشن کو بحث کرنے کے لئے اپیل کر رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: