உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Swathi Weapon Locating Radar :چین کے خلاف ہندوستانی فوج خرید رہی ہے ’سرچ رڈار‘SWATHI، جانیے خصوصیت

    چین کے ساتھ سرحد پر ہندوستانی فوج کو مزید طاقت دینے کے لیے فوج نے وزارت دفاع کو ڈیفنس ریسرچ سے مزید 12 سرچ ریڈار سواتی خریدنے کی تجویز بھیجی ہے۔

    چین کے ساتھ سرحد پر ہندوستانی فوج کو مزید طاقت دینے کے لیے فوج نے وزارت دفاع کو ڈیفنس ریسرچ سے مزید 12 سرچ ریڈار سواتی خریدنے کی تجویز بھیجی ہے۔

    Swathi Weapon Locating Radar :حال ہی میں آرمی چیف کا عہدہ سنبھالنے والے جنرل منوج پانڈے نے ہندوستانی فوج میں آتے ہی دیسی سازوسامان شامل کرنے کی بات کی ہے جس کے بعد بہت سے آلات کے آرڈر ہندوستانی تاجروں کو جانے کے امکانات بڑھ گئے ہیں۔

    • Share this:
      Swathi Weapon Locating Radar : چینی سرحد پر ہندوستانی فوج کو مزید طاقت دینے کے لیے، فوج نے دفاعی تحقیق اور ترقی کی تنظیم (DRDO) سے 12 مزید سرچ رڈار 'سواتی' (SWATHI) خریدنے کی تجویز وزارت دفاع کو بھیجی ہے۔ واضح رہے کہ ہندوستانی فوج چین کی بری چالوں پر نظر رکھنے کے لیے یہ ریڈار سسٹم خریدنا چاہتی ہے۔ یہ سرچ ریڈار ہند-چین سرحد پر تعینات کیے جائیں گے، تاکہ چین کے ذریعے ہونے والی دراندازی اور مداخلت کو مکمل طور پر روکا جا سکے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      رائے پور:ایئرپورٹ پرہیلی کاپٹرہواحادثے کاشکار،پائلٹ-کو پائلٹ کی موت،CMبگھیل کااظہار افسوس

      آخر سواتی رڈار ہی کیوں؟
      سواتی رڈار اپنے آپ میں بہت خاص ہے اور دشمنوں کے چھکے چھڑانے میں مہارت رکھتا ہے، ساتھ ہی ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ آرگنائزیشن (DRDO) نے تیار کیا ہے اور اسے مقامی کمپنی BHEL (بھارت الیکٹرانکس لمیٹڈ) نے تیار کیا ہے۔ جو نہ صرف کم قیمت میں ایک بہترین رڈار ہے بلکہ سخت موسم میں بھی کام کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ غور طلب ہے کہ 50 کلومیٹر کی رینج میں یہ رڈار دشمن کے خطرناک ہتھیاروں کو تلاش کرنے میں ماہر ہے۔ یہ ریڈار بیک وقت کئی سمتوں سے آنے والے گولوں اور راکٹوں کی سمت کا درست تعین کرنے میں ماہر ہے۔ یہ ریڈار پہلی بار جموں و کشمیر کی سرحد پر 2018 میں استعمال کیا گیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      One Step Portal:علاج کے لئے ہندوستان آنے والوں کواب’ون اسٹیپ‘ سے ملے گی مکمل معلومات

      دیسی آلات کا ہو استعمال
      بتادیں کہ حال ہی میں آرمی چیف کا عہدہ سنبھالنے والے جنرل منوج پانڈے نے ہندوستانی فوج میں آتے ہی دیسی سازوسامان شامل کرنے کی بات کی ہے جس کے بعد بہت سے آلات کے آرڈر ہندوستانی تاجروں کو جانے کے امکانات بڑھ گئے ہیں۔ اس فیصلے سے ہندوستان نہ صرف دفاعی شعبے میں خود کفیل ہو جائے گا بلکہ اسے دوسرے ممالک کو برآمد کر کے ہندوستان کے زرمبادلہ کے ذخائر کو بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: