ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

تمل ناڈو : کورونا کے خلاف ایکشن میں نئی ڈی ایم کے سرکار ، 14 دنوں کے مکمل لاک ڈاون کا اعلان

Lockdown in Tamil Nadu: ریاست میں 10 مئی سے 24 مئی تک مکمل لاک ڈاون لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ریاست میں متاثرین کی تعداد میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے سرکار نے یہ سخت قدم اٹھایا ہے ۔

  • Share this:
تمل ناڈو : کورونا کے خلاف ایکشن میں نئی ڈی ایم کے سرکار ، 14 دنوں کے مکمل لاک ڈاون کا اعلان
تمل ناڈو : کورونا کے خلاف ایکشن میں نئی ڈی ایم کے سرکار ، 14 دنوں کے مکمل لاک ڈاون کا اعلان

چنئی : تمل ناڈو میں ڈی ایم کے کی نئی سرکار کورونا وائرس کے خلاف ایکشن میں آگئی ہے ۔ ہفتہ کو سرکار نے ریاست میں 14 دنوں کے مکمل لاک ڈاون کا اعلان کیا ہے ۔ خاص بات یہ ہے کہ تمل ناڈو میں ایک دن پہلے ہی انفیکشن کے ریکارڈ معاملات درج کئے گئے تھے ۔ اس کے علاوہ پڑوسی ریاستوں کیرالہ اور کرناٹک میں بھی مکمل لاک ڈاون جاری ہے ۔


گزشتہ جمعہ کو ڈی ایم کے سربراہ ایم کے اسٹالن نے وزیر اعلی عہدہ کا حلف لیا ہے ۔ اقتدار میں آنے کے ساتھ ہی سرکار نے کورونا وائرس کے خلاف پابندیوں کا اعلان کیا ہے ۔ ریاست میں 10 مئی سے 24 مئی تک مکمل لاک ڈاون لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ریاست میں انفیکشن کی تعداد میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے سرکار نے یہ سخت قدم اٹھایا ہے ۔


گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک میں کورونا وائرس کے چار لاکھ ایک ہزار 78 نئے معاملات درج کئے گئے ہیں ۔ اس دوران چار ہزار 187 افراد کی موت ہوگئی ہے ۔ مرکزی وزارت صحت کی طرف سے جاری اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ 24 گھنٹوں میں تین لاکھ 18 ہزار 609 مریض گھر لوٹے ہیں ۔ نئے اعداد و شمار کو ملاکر ملک میں انفیکشن کی کل تعداد دو کروڑ 18 لاکھ 92 ہزار 676 ہوگئی ہے ۔ وہیں اموات کی تعداد دو لاکھ 38 ہزار کو پار کرگئی ہے ۔


میڈیا رپورٹس کے مطابق کرناٹک کے وزیر اعلی نے کورونا معاملات میں بے تحاشہ اضافہ کو دیکھتے ہوئے ریاست میں دس مئی سے 24 مئی تک کیلئے لاک ڈاون جیسی پابندیاں لگانے کا جمعہ کو اعلان کیا ۔ ریاست میں 27 اپریل سے کرفیو لگا ہوا ہے جو 12 مئی کو ختم ہونے والا تھا ۔

وزیر اعلی نے کہا کہ کورونا کی دوسری لہر نے ریاست میں بھر ڈر کا ماحول پیدا کردیا ہے اور کورونا کرفیو سے امید کے مطابق انفیکشن شرح یا اموات کی شرح کم کرنے میں مدد نہیں مل پارہی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 08, 2021 10:11 AM IST