உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Tamil Nadu News: چار دوستوں کے ساتھ بوائے فرینڈ نے کار میں لڑکی سے کی آبروریزی، متاثرہ کو ہائی وے پر چھوڑ کر بھاگے، سبھی گرفتار

    چار دوستوں کے ساتھ بوائے فرینڈ نے کار میں لڑکی سے کی آبروریزی، متاثرہ کو ہائی وے پر چھوڑ کر بھاگے، سبھی گرفتار

    چار دوستوں کے ساتھ بوائے فرینڈ نے کار میں لڑکی سے کی آبروریزی، متاثرہ کو ہائی وے پر چھوڑ کر بھاگے، سبھی گرفتار

    Tamil Nadu Crime News: لڑکی کو دوسری جگہ نوکری لگانے کے بہانے سے لے جاکر ملزمین نے اس گھناونی حرکت کو انجام دیا۔ یہ حادثہ تمل ناڈو کے کانچی پورم کا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:

      چنئی: تمل ناڈو میں 20 سالہ لڑکی سے اجتماعی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ لڑکی کے بوائے فرینڈ نے ہی اپنے چار دیگر دوستوں کے ساتھ مل کر مبینہ طور پر متاثرہ کی عصمت ریزی کی۔ الزام ہے کہ لڑکی کو دوسری جگہ نوکری لگانے کے بہانے سے لے جاکر ملزمین نے اس گھناونی حرکت کو انجام دیا۔ یہ حادثہ کانچی پورم کا ہے۔


      دراصل، متاثرہ ایک موبائل کی دوکان پر کام کرتی ہے اور وہیں پر کچھ دنوں پہلے اس کی دوستی گناسیلن نام کے لڑکے سے ہوئی تھی۔ ہر روز دوکان پر ملنے کے علاوہ سوشل میڈیا کے ذریعہ بھی دونوں ایک دوسرے سے بات کرتے تھے۔ کچھ دنوں کے بعد لڑکی کی ملقات گناسیلن نے اپنے ایک اور دوست سے کروائی۔ انہوں نے متاثرہ کو بھروسہ دلایا تھا کہ وہ کسی پرائیویٹ کمپنی میں اس کی نوکری لگا دیں گے۔




      تمل ناڈو میں 20 سالہ لڑکی سے اجتماعی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ لڑکی کے بوائے فرینڈ نے ہی اپنے چار دیگر دوستوں کے ساتھ مل کر مبینہ طور پر متاثرہ کی عصمت ریزی کی۔
      تمل ناڈو میں 20 سالہ لڑکی سے اجتماعی آبروریزی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ لڑکی کے بوائے فرینڈ نے ہی اپنے چار دیگر دوستوں کے ساتھ مل کر مبینہ طور پر متاثرہ کی عصمت ریزی کی۔

      اطلاعات کے مطابق، گناسیلن 8 ستمبر کو متاثرہ کو کار سے کانچی پورم میں واقع ایک فارم ہاوس میں لے گیا اور راستے میں سافٹ ڈرنک میں نشیلی اشیا ملاکر اسے پلا دیا۔ کچھ دیر بعد متاثرہ بے ہوش ہوگئی، تو گناسیلن نے اپنے چار اور دوستوں کو وہاں بلایا اور کار میں ہی متاثرہ کے ساتھ اجتماعی آبروریزی کی۔ حالانکہ ہوش میں آنے پر متاثرہ نے وہاں سے بھاگنے کی کوشش کی اور اسی کوشش میں اس نے اپنے پیروں سے کار کی کھڑکی توڑنے کی کوشش بھی کی۔ یہ سب دیکھ کرم قامی لوگوں کا دھیان کار کی طرف گیا۔ لوگوں کو کار کی طرف آتا دیکھ کر سبھی ملزمین کو چنئی - بنگلورو ہائی وے پر پھینک کر وہاں سے فرار ہوگئے۔ متاثرہ کو علاج کے لئے کانچی پورم کے سرکاری اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔


      سبھی ملزمین گرفتار


      حادثہ سامنے آتے ہی کانچی پورم کے پولیس سپرنٹنڈنٹ (ایس پی) نے ملزمین کو فوراً پکڑنے اور معاملے کی جانچ کے لئے اسپیشل ٹیم کی تشکیل کی۔ پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے آئندہ روز ہی 9 ستمبر کو چار ملزمین کو گرفتار کرلیا، جبکہ 10 ستمبر کو پانچواں ملزم بھی پولیس کی گرفت میں آگیا۔ سبھی ملزمین کے خلاف اجتماعی آبروریزی سمیت دیگر دفعات میں معاملہ درج کیا گیا ہے۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: