உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Teachers' Day 2022: آج ہندوستان بھر میں یوم اساتذہ کا اہتمام، جانیے ہندوستانی تاریخ کے پانچ عظیم ترین اساتذہ

    یہ دن ڈاکٹر رادھا کرشنن کی سالگرہ کے طور پر منایا جاتا ہے

    یہ دن ڈاکٹر رادھا کرشنن کی سالگرہ کے طور پر منایا جاتا ہے

    Teachers' Day 2022: سال 1962 سے یہ دن ڈاکٹر رادھا کرشنن کی سالگرہ کے طور پر منایا جاتا ہے، جو ایک مشہور استاد، مفکر، ماہر تعلیم اور سماجی مصلح تھے۔ جو ہندوستان میں تعلیم کے فروغ کے لیے مشہور ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai | Karnal | Hyderabad | Lucknow
    • Share this:
      Teachers' Day 2022: ہر سال 5 ستمبر کو ہندوستان کے سابق صدر جمہوریہ ڈاکٹر سرو پلی رادھا کرشنن (Dr Sarvepalli Radhakrishnan) کے یوم پیدائش کے موقع پر پورے ہندوستان میں یوم اساتذہ منایا جاتا ہے۔ اس دن اساتذہ کی خدمات کا اعتراف کیا جاتا ہے اور طلبہ اپنے اساتذہ کی خدمت میں تحفے تحائف پیش کرتے ہیں۔

      یہ دن اساتذہ اور طلبہ کے درمیان گہرے تعلق کو بھی ظاہر کرتا ہے۔ سال 1962 سے یہ دن ڈاکٹر رادھا کرشنن کی سالگرہ کے طور پر منایا جاتا ہے، جو ایک مشہور استاد، مفکر، ماہر تعلیم اور سماجی مصلح تھے۔ جو ہندوستان میں تعلیم کے فروغ کے لیے مشہور ہیں۔ ڈاکٹر رادھا کرشنن کے علاوہ بہت سے ایسے عظیم اساتذہ گزرے ہیں، جن کی تعلیمات سے لاکھوں لوگ متاثر ہوئے ہیں۔ جنہوں نے ہندوستان میں تعلیمی نظام کی بہتری میں نمایاں خدمات انجام دی۔

      یوم اساتذہ 2022 کے موقع پر ہندوستان کے پانچ عظیم ترین اساتذہ کے بارے میں تفصیلات پیش ہیں:

      ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام (Dr APJ Abdul Kalam):

      ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام نے ہندوستان کے 11 ویں صدر کے طور پر خدمات انجام دیں۔ ڈاکٹر کلام معروف سائنسدان کے علاوہ ماہر تعلیم بھی تھے اور وہ ہندوستان کی ترقی کے لیے تعلیم کو ایک اہم عنصر مانتے تھے۔ ان کا ماننا تھا کہ تعلیمی ڈگری حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ طلبہ کو ایک کامیاب کیریئر اور زندگی گزارنے کے لیے اپنی صلاحیتوں کو فروغ دینا چاہیے۔

      ڈاکٹر اے پی جے عبدالکلام کی شخصیت کے کئی پہلو تھے، لیکن ان میں سے تعلیم سب سے نمایاں اور قابل ذکر ہے۔ انھوں نے تھیوری کی تعلیم کے ساتھ ساتھ پریٹیکل پر بھی زور دیا۔ انہوں نے شہری اور دیہی علاقوں میں تعلیمی مواقع تک مساوی رسائی کی وکالت کرتے ہوئے معاشرے کے ہر فرد کو تعلیم حاصل کرنے کی ترغیب دی۔

      سوامی وویکانند (Swami Vivekananda)
      سوامی وویکانند کے نام سے تقربیاً ہر طالب علم واقف ہے۔ انھیں ملک کے سب سے بڑے اساتذہ میں سے ایک سمجھا جاتا تھا اور ان کے پاس ایسی ذہانت تھی جو بے مثال تھی۔ انھوں نے "رام کرشنا مشن" قائم کیا، جہاں اس کے عقیدت مند ویدانت کے بارے میں سیکھتے اور سکھاتے تھے۔ سوامی وویکانند نے گروکولہ نظام کو فروغ دیا، جس میں پروفیسر اور طلباء ایک ساتھ رہتے اور پڑھتے تھے۔

      رابندر ناتھ ٹیگور (Rabindra Nath Tagore)

      رابندر ناتھ ٹیگور ایک اور معروف ہندوستانی شخصیت تھے جنہیں ان کی علمی کامیابیوں کے لیے جانا جاتا ہے۔ ان کے خیال میں سرگرمیوں کے ذریعے سیکھنا بچے کی جسمانی اور ذہنی صلاحیتوں کو بہتر بنانے کا ایک ثابت شدہ طریقہ ہے۔ انھوں نے شانتی نکیتن کے تحت جسمانی سرگرمیوں جیسے تھیٹر، درختوں پر چڑھنا، پھل توڑنا، رقص اور دیگر سرگرمیوں کو فروغ دیا۔

      ساوتری بائی پھولے (Savitribai Phule)

      ساوتری بائی پھولے ایک انقلابی سماجی کارکن تھیں جنہوں نے روایتی ہندوستانی ثقافت کے چیلنجوں کے درمیان صنفی مساوات کو فروغ دیا اور لڑکیوں کی تعلیم کے لیے اپنی زندگی وقف کر دی۔ ساوتری بائی پھولے کی شادی سے پہلے کوئی رسمی تعلیم نہیں ہوئی تھی۔ وہ پہلی ہندوستانی خاتون تھیں جو ٹیچر بنیں۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      Relationship:نئے لوگوں سے دوستی کرنے کیلئے ایسے شروع کریں بات چیت، ہر کوئی ہوجائے گا متاثر

      انھوں نے اپنے شوہر کے ساتھ مل کر ریاست مہاراشٹر میں لڑکیوں کے لیے کئی اسکول بنائے۔
      یہ بھی پڑھیں: 

      Mohali fair: موہالی میلے میں ہر جگہ خوف ہی خوف! جوئرائیڈ ہوا تباہ، 5 بچوں سمیت 10 افراد زخمی

       

      چانکیہ (Chanakya)

      چانکیہ وشنو گپتا اور کوٹیلیہ کے نام سے بھی جانے جاتے تھے۔ وہ ایک ممتاز ہندوستانی استاد تھے جو چوتھی صدی میں نمایاں خدمات انجام دی۔ چانکیہ  فلسفی اور بادشاہ چندرگپت موریہ کے شاہی مشیر کے باوقار عہدوں پر فائز تھے۔ انھوں نے دو کتابیں چانکیہ نیتی اور ارتھ شاستر لکھیں۔

       
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: