دھوکہ دہی اور سیکسوئل حملہ ہے ہندستان میں سائبر کرائم کی سب سے بڑی وجہ: رپورٹ

آسام اور مہاراشٹر میں سائبر حملے کے پیچھے سب سے بڑا مقصد جنسی استحصال رہا جبکہ یوپی میں اس کی سب سے بڑی وجہ دھوکہ دہی(فراڈ) یا پیسے کی وصولی ہے۔

Oct 22, 2019 11:37 AM IST | Updated on: Oct 22, 2019 01:44 PM IST
دھوکہ دہی اور سیکسوئل حملہ ہے ہندستان میں سائبر کرائم کی سب سے بڑی وجہ: رپورٹ

Representative image. (Photo: Getty Images)

نیشنل کرائم ریکارڈس بیورو کے ذریعے جاری کئے گئے ڈیٹا کے مطابق ہندستان میں سال 2015 میں سائبر کرائم کے معاملے  میں سب سے زیادہ تعداد فراڈ ٹرانزیکشن ان انڈیا اور جنسی استحصال (سیکسوئل ایکسپلائٹیشن کیسز ان انڈیا) کی رہی۔ شیئر کئے گئے ڈاکیومینٹ کے مطابق ان سب میں سائبر فراڈ کی تعداد سب سے زیادہ رہی۔ ا س کے بعد سائبر کرائم کے معاملے میں دوسرا مقام آن لائن جنسی استحصال کا رہا ہے۔ اس کے کل 1460 معاملے درج کئے گئے۔

سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں ملا کر اس کی تعداد 12,213 رہی۔ ریاستوں کے معاملے میں یوپی کا مقام پہلا تھا۔ یوپی میں سائبر کرائم کے کل 4,971  معاملے درج کئے گئے۔ اس کے بعد 3,604 معاملوں کے ساتھ مہاراشٹر کا مقام دوسرا رہا ۔ جبکہ کرناٹک اس معاملے میں تیسرے نمبر پر رہا۔ شمال مشرق میں سائبر کرائم کی سب سے زیادہ تعداد آسام میں رہی۔

آسام اور مہاراشٹر میں سائبر حملے کے پیچھے سب سے بڑا مقصد جنسی استحصال رہا جبکہ یوپی میں اس کی سب سے بڑی وجہ دھوکہ دہی(فراڈ) یا پیسے کی وصولی ہے۔ ان سب کے ساتھ ساتھ کرناٹک میں سائبر کرائم کی سب سے بڑی وجہ لوگوں کی شبیہ خراب کرنا رہی ہے۔

لیکن دھیان دینے والی بات یہ ہے کہ یہ سارے اعدادوشمار وہی ہیں جن کی رپورٹنگ ہوپائی ہے لیکن کافی وجوہات سے تمام معاملوں میں رپورٹنگ نہیں ہوپاتی۔ ان وجوہات میں لوگوں میں بیداری کی کمی ، افسران میں بیداری کی کمی، آن لائن ایکزکیوشن کا ڈر، میڈیا یا سوشل ٹرائل جیسی وجوہات شامل ہیں۔ اس کےعلاوہ سائبر کرائم ہندستان میں کافی کچھ ان آرگنائزڈ طریقے سے ہوتا ہے۔ جس کی وجہ سے سبھی افسران کو اس کا پتہ لگانے میں دقت ہوتی ہے۔

Loading...

حالانکہ حال ہی کے دنوں میں کئی تنظیمیں ساتھ مل کر سائبر کرائم کے خلاف لوگوں میں بیداری پھیلانے کا کام کررہی ہیں۔ وہیں پوری دنیا میں ہندستان جس طرح تیزی سےمعاشی ترقی کر رہا ہے اسی طرح سے یہاں انٹرنیٹ مارکیٹ بھی تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ انٹرنیٹ مارکیٹ کے بڑھنے کے ساتھ ساتھ سائبر کرائم کے خطرے بھی بڑھتے جارہے ہیں جس سے حکومت اور افسران کے اوپر انہیں بچانے کی کافی ذمہ داری ہے۔

Loading...