ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

تلنگانہ کابینہ کااجلا س آج : وزیراعلیٰ کے سی آر لاک ڈاؤن کے متعلق کرسکتے یہ اہم فیصلے

کابینہ کے مشورے اور حالات کا جائزہ لینے کے بعد لاک ڈاؤن کے اوقات میں مزید نرمی پر کوئی فیصلہ کیا جائیگا ۔ فی الحال صبح 6 تا ایک بجے اور مکانات کو لوٹنے کیلئے مزید ایک گھنٹے کی نرمی دی جا رہی ہے ۔ جو اشارے مل رہے ہیں ان کے مطابق 10 جون سے صبح 6 بجے تا شام 5 بجے نرمی کے اوقات اور ایک گھنٹہ مکانات کو پہونچنے کا وقت دیا جائے گا اور رات کا کرفیو برقرار رکھا جائے گا ۔

  • Siasat
  • Last Updated: Jun 08, 2021 08:35 AM IST
  • Share this:
تلنگانہ کابینہ کااجلا س آج : وزیراعلیٰ کے سی آر لاک ڈاؤن کے متعلق کرسکتے یہ اہم فیصلے
تلنگانہ کابینہ کا اجلاس آج

تلنگانہ میں 10 جون سے رات کا کرفیو برقرار رہنے کے امکانات ہیں۔ ریاستی کابینہ کے اجلاس میں تفصیلی غور کے بعد دن کے اوقات میں مزید نرمی دینے پر غور کیا جائیگا۔ آج دوپہر 2 بجے وزیراعلیٰ چندرشیکھر راؤ کی قیادت میں ریاستی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوگا۔ پرگتی بھون میں منعقدہ اس اجلاس میں ریاست کے موجودہ حالات اور کوویڈ ۔ 19 پر تفصیلی غور و خوض ہوگا اور کیسوں و کورونا کے پھیلاو کی صورتحال ‘ ٹیکہ اندازی کے عمل میں تیزی اور آمدنی میں اضافہ کے موضوعات پر بات چیت ہوگی۔


باوثوق ذرائع کے مطابق کابینہ کے مشورے اور حالات کا جائزہ لینے کے بعد لاک ڈاؤن کے اوقات میں مزید نرمی پر کوئی فیصلہ کیا جائیگا ۔ فی الحال صبح 6 تا ایک بجے اور مکانات کو لوٹنے کیلئے مزید ایک گھنٹے کی نرمی دی جا رہی ہے ۔ جو اشارے مل رہے ہیں ان کے مطابق 10 جون سے صبح 6 بجے تا شام 5 بجے نرمی کے اوقات اور ایک گھنٹہ مکانات کو پہونچنے کا وقت دیا جائے گا اور رات کا کرفیو برقرار رکھا جائے گا ۔


تلنگانہ میں 9 جون کے بعد ختم ہوسکتاہے لاک ڈاؤن
تلنگانہ میں 9 جون کے بعد ختم ہوسکتاہے لاک ڈاؤن


رات کے کرفیو پر سختی کے ساتھ عمل آوری جاری رہے گی۔ معتبر ذرائع کے مطابق قطعی فیصلہ اور احکامات کی اجرائی کیلئے ریاستی کابینہ اجلاس میں اہم فیصلہ لے گی۔ چونکہ 9 جون تک لاک ڈاؤن پر عمل آوری اور صبح 6 تا دوپہر ایک بجے تک نرمی کے فیصلہ 30 مئی کے کابینی اجلاس میں لیا گیا تھا۔ اس ضمن میں چیف سکریٹری نے مختلف محکموں کے عہدیداروں سے رپورٹ طلب کی ہے کہ حکومت کی فلاحی اسکیمات اور ترقیاتی اقدامات کی عمل آوری کیلئے ضروری فنڈس کیلئے آمدنی میں اضافہ کیا جائے گا۔

٭ صبح 6 تا شام 5 بجے نرمی ‘ گھر واپسی کیلئے اضافی ایک گھنٹہ ممکن
٭ رات کا کرفیو جاری رکھنے اور سختی سے عمل آوری کی ہدایات کا امکان
٭ کورونا کی امکانی تیسری لہر سے نمٹنے کے اقدامات کا جائزہ لیا جائیگا

رجسٹریشن، ٹرانسپورٹیشن اور آبکاری کے محکموں سے مزید آمدنی کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ لاک ڈاؤن کے سبب کورونا کیسوں میں کمی اور اس کے ذریعہ مالی بوجھ کی تفصیلات پر رپورٹ تیار کی جائیگی۔ اس خصوص میں محکمہ جات ہیلت، ایجوکیشن، پولیس، آبکاری، ٹرانسپورٹ ٹیکس ریونیو و دیگر محکموں سے رپورٹ حاصل کی جارہی ہے اور چیف منسٹر خود وزراء اور ارکان اسمبلی و دیگر عوامی نمائندوں سے رائے حاصل کرنے بذریعہ فون ان سے رابطہ قائم کررہے ہیں۔ اس دوران کورونا کی تیسری لہر کے اندیشوں کا بھی جائزہ لیا جائیگا ۔ قبل ازوقت احتیاطی تدابیر پر غور ہوگا ۔ سمجھاجارہا ہے کہ ریاست میں شعور بیداری کے ساتھ حساس افراد کی نشاندہی کرکے ٹیکہ اندازی کے اقدامات کئے جائیں گے۔

ریاست میں فی الحال ٹیکہ اندازی جاری ہے اور آکسیجن کی قلت بھی دور ہوئی ہے اور ادویات دستیاب رکھی جارہی ہیں۔ چیف منسٹر کی جانب سے 19 اضلاع میں ڈائیگوسٹک سنٹر قائم کئے جارہے ہیں۔ کورونا کی تیسری لہر کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے حکومت کی جانب سے ممکنہ اقدامات کئے جارہے ہیں۔ اس ضمن میں ایک ہی وقت تمام 19 ڈائیگنوسٹک سنٹرس کے افتتاح کے پروگرام کو بھی چیف منسٹر نے منسوخ کردیا جو آج کیا جارہا تھا۔ تاہم ان سنٹرس کا 9 جون کو تمام اضلاع میں ایک ساتھ افتتاح عمل میں آئیگا۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jun 08, 2021 08:35 AM IST