ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

سی اے اے پر کے سی آر نے کہا : جب ملک کی بدنامی ہو رہی ہو تو ہم خاموش نہیں بیٹھ سکتے ، کیا یہ بڑا اعلان

تلنگانہ کے وزیر اعلی کے سی آر نے کہا کہ ہندوستان سیکیولر جمہوریت ملک ہے ۔ اس کو کسی مذہبی ملک کے طور پر پیش کرنے کی کوئی گنجایش نہیں ہے ۔ اس ایکٹ کی وجہ سے پوری دنیا میں ملک کی بدنامی ہو رہی ہے ۔

  • Share this:
سی اے اے پر کے سی آر نے کہا : جب ملک کی بدنامی ہو رہی ہو تو ہم خاموش نہیں بیٹھ سکتے ، کیا یہ بڑا اعلان
تلنگانہ کے وزیراعلیٰ چندر شیکھر راؤ: فائل فوٹو

ایسا لگ رہا تھا جیسے تلنگانہ کے وزیر اعلی کے سی آر  شہریت قانون پر اپنے اظہار خیال کے لیے میونسپل الیکشنس کے نتائج کا انتظار کر رہے تھے ۔ ہمیشہ کی طرح بے داغ سفید شرٹ پینٹ اور اپنے دائیں بازو پر امام ضامن باندھے، کے سی آر نے میونسپل الکشن کے تین چوتھائی نشستوں پر کامیابی کو ' تھری سکسٹی ڈگری سکسس ' قرار دیا اور اس  کے لیے انہوں نے عوام کا شکریہ ادا کیا ۔ بعد ازاں انہوں نے اپنی حکومت کی پالسیوں کے بارے میں بارے میں بتایا۔


پھر اپنی بات چیت کا رخ شہریت ترمیمی قانون سی اے اے کی طرف موڑ تے ہوئے کہا کہ ان کی پارٹی نے پارلیمنٹ میں ہی سے ای بی کی مخالفت کرتے ہوئے اس پر اپنا موقف واضح کر دیاتھا ۔ سی اے اے کو ہندوستان کے دستور کی روح کے خلاف قرار دیتے ہوئے کے سی آر نے اسے "ہنڈرڈ پرسنٹ رانگ " قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان سیکیولر جمہوریت ملک ہے ۔ اس کو کسی مذہبی ملک کے طور پر پیش کرنے کی کوئی گنجایش نہیں ہے ۔ اس ایکٹ کی وجہ سے پوری دنیا میں ملک کی بدنامی ہو رہی ہے ۔


وزیر اعلی نے کہا کہ قوانینِ عوام کے لیے بنائے جاتے ہیں ، اگر عوام کسی قانون پر نا راض ہیں تو اس پر نظر ثانی کی جا سکتی ہے ۔ ہماری ملٹری نہیں بلکہ جمہوری طرز حکومت ہے ۔ کے سی آر نے کہا کہ ہم اگلے اسمبلی سیشن میں سی اے اے کے خلاف قرارداد منظور کریں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں بہت جلد سی اے اے سے اختلاف کرنے والے پندرہ سولہ چیف منسٹرس اور علاقائی پارٹیوں کو حیدرآباد مدعو کروں گا اور ضرورت پڑنے پر دس لاکھ لوگوں کا اجلاس بھی منعقد کیا جائے گا ۔ جب ملک بدنام ہو رہا ہو تو ہم خاموش نہیں بیٹھ سکتے ۔


ساتھ ہی ساتھ انہوں نے کہا کہ میں عزت مآب وزیر اعظم سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس پر دوبارہ غور کریں ۔ اس سے متعلق عوام کو کافی شکوک و شبہات ہیں ، اس پر خود مرکزی وزراء کے متضاد بیانات آرہے ہیں اور یہ ہمارے ملک کے لیے ٹھیک نہیں ہے۔ نظام آباد میونسپل کارپوریشن کے نتیجہ پر پوچھے گیے سوال پر کے سی آر نے کہا کہ مجلس کے ساتھ مل کر وہاں کامیابی حاصل کی جائے گی ۔ نظام آباد میونسپل کارپوریشن میں کوئی بھی پارٹی واضح اکثریت حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی ہے ۔
First published: Jan 26, 2020 01:36 PM IST