உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CBI:تلنگانہ کے سی ایم کے سی آر نے کہا-ملک کے سبھی ریاستوں کو سی بی آئی کو دی گئی عمومی رضامندی واپس لینی چاہیے

    تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے سی آر نے کی بہار کے سی ایم نتیش کمار اور تیجسوی یادو سے ملاقات۔

    تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے سی آر نے کی بہار کے سی ایم نتیش کمار اور تیجسوی یادو سے ملاقات۔

    راؤ کا یہ تبصرہ بہار میں حکمراں 'مہاگٹھ بندھن' کے رہنماؤں کی طرف سے سی بی آئی سے اتفاق رائے کو واپس لینے کے مطالبے کے درمیان آیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Patna | Hyderabad | West Bengal
    • Share this:
      پٹنہ: تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے چندر شیکھر راو نے مرکزی حکومت کی جانب سے مرکزی جانچ ایجنسیوں کے مبینہ غلط استعمال کے درمیان کہا کہ ملک کے سبھی ریاستوں کو جانچ کے لئے سی بی آئی کو دی گئی عمومی رضامندی واپس لینی چاہیے۔ بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار کے ساتھ پٹنہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کے سی آر نے الزام لگایا کہ بی جے پی اپنے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنانے کے لئے سبھی مرکزی ایجنسیوں کا غلط استعمال کررہی ہے۔

      کے چندر شیکھر راو نے کہا کہ ’سی بی آئی سمیت تمام مرکزی تفتیشی ایجنسیوں کا ملک میں بی جے پی کے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنانے کے لئے مرکز کی طرف سے غلط استعمال کیا جا رہا ہے۔ یہ سلسلہ اب بند ہونا چاہئے اور تمام ریاستی حکومتوں کو سی بی آئی کو دی گئی اپنی رضامندی واپس لے لینی چاہئے، کیونکہ پولیس ریاست کا موضوع ہے۔

      راؤ کا یہ تبصرہ بہار میں حکمراں 'مہاگٹھ بندھن' کے رہنماؤں کی طرف سے سی بی آئی سے اتفاق رائے کو واپس لینے کے مطالبے کے درمیان آیا ہے۔ بہار میں حکمراں عظیم اتحاد کے کئی رہنماؤں نے الزام لگایا ہے کہ مرکز میں بی جے پی زیرقیادت حکومت ایجنسیوں کو ’سیاسی مقاصد‘ کے لیے استعمال کر رہی ہے اور سی بی آئی سے رضامندی واپس لینے کا مطالبہ کر رہی ہے۔

      دہلی اسپیشل پولیس اسٹیبلشمنٹ (DSPE) ایکٹ، 1946 کے سیکشن 6 کے مطابق، سی بی آئی کو کیس کی تحقیقات کے لیے متعلقہ ریاستی حکومتوں کی رضامندی کی ضرورت ہوتی ہے۔ اگر عام رضامندی واپس لی جاتی ہے تو سی بی آئی کو کیس درج کرنے کے لیے ریاستی حکومت سے اجازت لینی ہوگی۔

      یہ بھی پڑھیں:

      West Bengal: 'اگر ثابت ہوجائے تو چلا دینا بلڈوزر....' جانئے ممتا بنرجی نے کیوں کہی یہ بات

      یہ بھی پڑھیں:
      پھر مشکل میں AAP کے لیڈران، ناراض ایل جی نے کہا: آتشی، درگیش اور سوربھ پر ہوگا کیس

      بتادیں کہ مغربی بنگال، چھتیس گڑھھ، راجستھان، پنجاب اور میگھالیہ سمیت 9 ریاستوں نے اپنے زیر کنٹرول علاقوں میں کیسیز کی جانچ کے لئے سی بی آئی کو دی گئی عمومی رضامندی پہلے ہی واپس لے لی ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: