உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Telangana News: ٹی راجہ سنگھ کی اہلیہ نے تلنگانہ ہائی کورٹ میں شوہر کی گرفتاری کو کیا چیلنج، جانئے کیا ہے معاملہ

    Telangana News: ٹی راجہ سنگھ کی اہلیہ نے تلنگانہ ہائی کورٹ میں شوہر کی گرفتاری کو کیا چیلنج، جانئے کیا ہے معاملہ

    Telangana News: ٹی راجہ سنگھ کی اہلیہ نے تلنگانہ ہائی کورٹ میں شوہر کی گرفتاری کو کیا چیلنج، جانئے کیا ہے معاملہ

    Telangana News: ایم ایل اے راجہ سنگھ کی بیوی نے شوہر کی گرفتاری کو غلط قرار دیتے ہوئے تلنگانہ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی ہے۔ ٹی راجہ کی بیوی نے شوہر کے خلاف جاری حراستی حکم نامے کو منسوخ کرنے کی درخواست کی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Telangana | Hyderabad | Hyderabad
    • Share this:
      حیدرآباد: ایم ایل اے راجہ سنگھ کی بیوی نے شوہر کی گرفتاری کو غلط قرار دیتے ہوئے تلنگانہ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی ہے۔ ٹی راجہ کی بیوی نے شوہر کے خلاف جاری حراستی حکم نامے کو منسوخ کرنے کی درخواست کی ہے۔ راجہ سنگھ کو گزشتہ ماہ پیغمبر اسلام کے خلاف قابل اعتراض ریمارکس کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ ساتھ ہی ٹی راجہ کی بیوی اوشا بائی کی طرف سے داخل عرضی میں کہا گیا ہے کہ یہ صرف چند لوگوں کو خوش رکھنے کے لئے کیا جا رہا ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے:  مدھیہ پردیش وقف بورڈ انتخاب پر ہائی کورٹ نے لگائی روک


      راجہ سنگھ کو حیدرآباد پولیس نے پریوینٹیو ڈیٹینشن ایکٹ (پی ڈی ایکٹ) کے تحت گرفتار کیا ہے۔ ٹی راجہ کو دوسری مرتبہ گرفتار کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے ٹی راجہ کو اسلام اور پیغمبر اسلام کے خلاف قابل اعتراض بیان کے الزام میں گرفتاری کے بعد ضمانت دی گئی تھی۔ پیغمبر اسلام کے بارے میں ان کے قابل اعتراض بیان کے بعد حیدرآباد شہر میں احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے تھے ۔ اس واقعہ کے بعد تنازعات میں گھری بی جے پی نے بھی راجہ کو پارٹی سے باہر کا راستہ دکھا دیا تھا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: J&K News: پوش کریری اننت ناگ میں انکاونٹر کے دوران حزب المجاہدین کے دو دہشت گرد ہلاک


      خیال رہے کہ پولیس نے بیان میں کہا ہے کہ وہ عادتاً اشتعال انگیز اور اکسانے والی تقریریں کرتے ہیں ۔ پولیس نے راجہ پر الزام لگایا ہے کہ وہ اکثر دو کمیونٹی کے درمیان دراڑ پیدا کرتے رہے ہیں، جس کی وجہ سے امن و امان کا مسئلہ پیدا ہوتا ہے۔ وہیں ایم ایل اے کی اہلیہ اوشا بائی نے اپنی درخواست میں کہا کہ موجودہ حراست کا حکم صرف چند لوگوں کو مطمئن کرنے کے لئے جاری کیا گیا ہے۔

      عرضی میں کہا گیا کہ میں یہ بتانا چاہتی ہوں کہ جن کے لئے یہ کیا جا رہا ہے، وہ پورے پورے عوام نہیں ہیں۔ ایسا لگتا ہے کہ یہ صرف ان کی خوشنودی کے لئے کیا جا رہا ہے نہ کہ کسی اور وجہ سے۔ یہ ریاستی پولیس اتھارٹی کی امن و امان برقرار رکھنے میں ناکامی کا بھی ثبوت ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: