ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

ؒTelangana Lockdown : صبح6سے شام6بجےتک نرمی کااعلان،4لاکھ سے زائدخاندانوں کو ملےگایہ تحفہ

کھمم کے علاقہ مدھیرا اور ستوپلی‘ نلگنڈہ‘ ناگرجنا ساگر‘ دیورکنڈہ‘ مونوگورو‘ مریال گوڑہ اسمبلی حلقوں میں نرمی کے اوقات صبح 6 بجے سے دوپہر1بجے تک ہوں گے۔ جہاں کورونا وائرس میں بہت زیادہ کیسس پائے جارہے ہیں۔ یہ علاقے آندھراپردیش کی سرحد پر واقع ہیں۔ کابینہ کا اجلاس دوپہر 2 بجے شروع ہوا جو رات 8 بجے کے بعد بھی جاری رہا۔

  • Share this:
ؒTelangana Lockdown : صبح6سے شام6بجےتک نرمی کااعلان،4لاکھ سے زائدخاندانوں کو ملےگایہ تحفہ
تلنگانہ کابینہ نے تلنگانہ میں جاری لاک ڈاؤن میں مزید 10 دنوں کی توسیع کا فیصلہ کیاہے

تلنگانہ کابینہ نے تلنگانہ میں جاری لاک ڈاؤن میں مزید 10 دنوں کی توسیع کا فیصلہ کیاہے۔ تام نرمی کے اوقات کو وسعت دیتے ہوئے اسے صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک کردیاہے۔ تاہم دکانات اور کاروباری ادارے شام 5 بجے تک بند ہوجائیں گے اور مابقی ایک گھنٹہ میں عوام کو اپنے گھروں تک پہونچنے کا موقع دیا جائے گا۔ کابینہ کے فیصلہ کے مطابق کرفیو شام 6 بجے سے صبح 6 بجے کے درمیان نافذ رہے گا۔ کابینہ کے اجلاس میں غور خواص کے بعد تلنگانہ سی ایم او کی جانب سے جاری کردہ پریس نوٹ میں تفصیلات بتائی گئی ہے۔


وزیراعلیٰ کے دفتر سے جاری کردہ پریس نوٹ میں کہا گیا کہ لاک ڈاؤن 19 جون تک بڑھایا جا رہا ہے۔ اس فیصلہ پر 10 جون سے عمل ہوگا۔ اس سلسلہ میں تازہ رہنما ہدایات جاری کی جائیں گی۔ تاہم کھمم کے علاقہ مدھیرا اور ستوپلی‘ نلگنڈہ‘ ناگرجنا ساگر‘ دیورکنڈہ‘ مونوگورو‘ مریال گوڑہ اسمبلی حلقوں میں نرمی کے اوقات صبح 6 بجے سے دوپہر1بجے تک ہوں گے۔ جہاں کورونا وائرس میں بہت زیادہ کیسس پائے جارہے ہیں۔ یہ علاقے آندھراپردیش کی سرحد پر واقع ہیں۔ کابینہ کا اجلاس دوپہر 2 بجے شروع ہوا جو رات 8 بجے کے بعد بھی جاری رہا۔تلنگانہ کے چیف سکریٹری نے لاک ڈاؤن کے تیسرے مرحلے کے لیے رہنمایانہ خطوط جاری کردیئے ہیں۔



کورونا وائرس کی دوسری لہر کے درمیان ریاستی ہائی کورٹ کے دباو میں نائٹ کرفیو اور لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ کیا گیا۔ 12 مئی کو ریاست میں 20 گھنٹے کا لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا۔ ابتدا میں یہ لاک ڈاون 10 دنوں کے لئے 22 مئی تک نافذ تھا بعد میں اس میں 30 مئی تک توسیع کی گئی۔ اتوار کو لاک ڈاؤن میں دوسری مرتبہ توسیع کی گئی۔ اس کے بعد اس مدت کو 9 جون تک بڑھایا گیا۔ ملک کے بیشتر مقامات کی طرح تلنگانہ میں بھی کورونا وائرس کے کیسوں میں کمی آ رہی ہے‘ منگل کو وزارت صحت کی طرف سے جاری بلٹین کے مطابق 24 گھنٹوں میں 1,897 کیسس پائے گئے اور 15 اموات ہوئی

تلنگانہ کابینہ نے ایک بڑا فیصلہ کرتے ہو ئے ریاست میں آئندہ 15دنوں میں 4,46,169 خاندانوں کو نئے راشن کارڈ جاری کرنے کا فیصلہ کیاہے۔ حکومت کا کہناہے کہ ایسے افراد کو راشن کارڈ جاری کیاجائیگا جنہوں نے پہلے ہی محکمہ سیول سپلائز میں درخواستیں جمع کروائی ہے۔ وزیراعلیٰ کے سی آر نے عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ راشن کارڈ کے لیے ماضی میں موصول ہوئی درخواستوں پر کارروائی کرتے ہوئے ان درخواست گزاروں کو صرف اور صرف 15دنوں میں راشن کارڈ جاری کریں ۔


یادر ہے کہ31 مئی کو تلنگانہ حکومت نے ریاست میں جاریہ لاک ڈاؤن 10 دنوں کے لئے بڑھانے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس فیصلہ کے مطابق ریاست میں 9 جون تک لاک ڈاؤن جاری ہے۔ اس کے دوران صبح 6 بجے سے دوپہر ایک بجے تک بازار کھلے رکھنے کی اجازت دی گئی تھی جب کہ عوام کو گھروں کو واپس جانے کے لئے دوپہر 2 بجے تک کا وقت دیا گیا ہے۔ تلنگانہ میں کورونا وائرس کیسوں کی روک تھام کے لئے سب سے پہلے 20 اپریل کو نائٹ کرفیو نافذ کیا گیا تھا جس کے اوقات رات 8 بجے سے صبح 7 بجے تک تھے۔
Published by: Mirzaghani Baig
First published: Jun 08, 2021 11:06 PM IST