اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ہندوستان کا وہ شہر، جہاں 52 سیکنڈس میں بُت بن جاتے ہیں لوگ، 1 قدم بھی نہیں ہلتا کوئی!

     عام طور پر یوم جمہوریہ کی تقریبات یا یوم آزادی پر (Republic Day celebrations) پورا ملک ترنگے کے سامنے سلامی دے کر محتاط انداز میں کھڑا ہوتا ہے۔ نلگنڈہ کے لوگ اس احساس کو ہر روز جیتے ہیں۔

    عام طور پر یوم جمہوریہ کی تقریبات یا یوم آزادی پر (Republic Day celebrations) پورا ملک ترنگے کے سامنے سلامی دے کر محتاط انداز میں کھڑا ہوتا ہے۔ نلگنڈہ کے لوگ اس احساس کو ہر روز جیتے ہیں۔

    عام طور پر یوم جمہوریہ کی تقریبات یا یوم آزادی پر (Republic Day celebrations) پورا ملک ترنگے کے سامنے سلامی دے کر محتاط انداز میں کھڑا ہوتا ہے۔ نلگنڈہ کے لوگ اس احساس کو ہر روز جیتے ہیں۔

    • Share this:
      نلگنڈہ(تلنگانہ):آئیے آپ کو ایک ایسے شہر سے ملواتے ہیں جہاں ہر صبح اچانک 52 سیکنڈ کے لیے سب کچھ رک جاتا ہے۔ جہاں کوئی کھڑا رہتا ہے تو وہ اُسی حالت میں جم جاتا ہے۔ بچے سے بوڑھے تک، عورت سے مرد تک، ایک قدم بھی پیچھے نہیں ہوتا۔ آپ سوچ رہے ہوں گے کہ جب لوگ حرکت کرنا چھوڑ دیتے ہیں تو کیا ہوتا ہے۔
      ایسا اس لیے ہوتا ہے کیونکہ اس شہر کے لوگوں کو صبح کے ایک خاص وقت پر قومی ترانہ(National Anthem) پڑھنا پڑتا ہے۔ تلنگانہ کے شہر نلگنڈہ (Nalgonda, Telangana) میں روزانہ صبح 8:30 بجے لاؤڈ اسپیکر پر قومی ترانہ(National Anthem is played on loudspeaker) بجایا جاتا ہے اور پورا شہر 52 سیکنڈ کے لیے رک جاتا ہے۔ شہر کے مختلف علاقوں میں 12 بڑے لاؤڈ اسپیکر لگائے گئے ہیں۔ آنے والے چند مہینوں میں شہر کے گرد و نواح میں مزید کئی مقامات پر لاؤڈ اسپیکر لگائے جانے والے ہیں۔

      ترنگے کو ملے ہر روز اعزاز
      منتظمین کو اس خیال پر کام کرنے کی تحریک جمی کنٹا(Jammikunta) نامی جگہ سے ملی تھی۔ جہاں ہر روز قومی ترانہ بجایا جاتا تھا۔ اس سے متاثر ہو کر نلگنڈہ میں جن-گن-من اتسو سمیتی کی طرف سے یہ پروگرام(Program started by Jan-Gana-Man Utsav Samiti) شروع کیا گیا تھا۔ پہلی بار یہ تجربہ 23 جنوری 2021 کو شہر میں کیا گیا۔ انتظامی افسران نے کمیٹی کے اس اقدام کو خوب سراہا۔ جس وقت قومی ترانہ بجایا جاتا ہے، کمیٹی کے کارکن شہر بھر میں مختلف مقامات پر ترنگا لے کر کھڑے ہوتے ہیں۔

      یہاں قومی ترانہ کسی تہوار کا محتاج نہیں
      نلگنڈہ (Nalgonda)کے لوگوں کے لیے یہ لمحہ بہت ہی سنسنی خیز ہوتا ہے۔ اب سوچئے، کیا یہ اپنے آپ میں انوکھی بات نہیں ہے کہ عام طور پر یوم جمہوریہ کی تقریبات یا یوم آزادی پر (Republic Day celebrations) پورا ملک ترنگے کے سامنے سلامی دے کر محتاط انداز میں کھڑا ہوتا ہے۔ نلگنڈہ کے لوگ اس احساس کو ہر روز جیتے ہیں۔ سوشل میڈیا کے مختلف پلیٹ فارمز پر اس خبر کو دیکھنے کے بعد لوگوں نے اس اقدام کو سراہا ہے۔ اس اقدام کو اس وقت مزید سراہا گیا جب سڑک پر دو چھوٹے بچے قومی ترانہ سننے کے بعد سڑک کے بیچوں بیچ محتاط انداز میں کھڑے ہو گئے اور قومی ترانہ ختم ہونے تک انہوں نے حرکت نہیں کی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: