یوم آزادی کے موقع پرلال قلعہ پرہوسکتا ہے دہشت گردانہ حملہ، الرٹ جاری

دارالحکومت دہلی کے 17 علاقے انتہائی حساس قراردیئے گئے ہیں۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق دہشت گرد افغانستان کے پاسپورٹ پرقومی راجدھانی میں داخل ہوسکتے ہیں۔

Aug 11, 2019 05:52 PM IST | Updated on: Aug 11, 2019 05:52 PM IST
یوم آزادی کے موقع پرلال قلعہ پرہوسکتا ہے دہشت گردانہ حملہ، الرٹ جاری

دارالحکومت دہلی کے17 علاقے انتہائی حساس قراردیئے گئے ہیں۔ 

یوم آزادی کےموقع پر15 اگست کے موقع پرقومی راجدھانی دہلی واقع لال قلعہ پردہشت گردانہ حملہ ہوسکتا ہے۔ سیکورٹی ایجنسیوں نے اس بابت الرٹ جاری کیا ہے۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق دہشت گرد افغانستان کے پاسپورٹ پرقومی راجدھانی میں داخل ہوسکتے ہیں۔

ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ لال قلعہ کے تین کلومیٹرکے دائرے میں دہشت گردانہ حملہ ہوسکتا ہے۔ سیکورٹی ایجنسیوں نے کہا کہ دہشت گرد، سیور، گڈھے اوردیگرراستوں کا استعمال کرکے حملہ کرسکتے ہیں۔ الرٹ میں کہا گیا ہے کہ دہشت گرد آئی ای ڈی، سرکاری گاڑی اور وردی کا استعمال کرسکتے ہیں۔

Loading...

اتنا ہی نہیں ایجنسیوں نے کہا ہے کہ تین سے چاردہشت گرد دہلی میں داخل ہوسکتے ہیں۔ سیکورٹی ایجنسیوں نے کچھ مشکوک فون کال انٹرسیپٹ کئے، جن کے بعد اس ارادے کی تصدیق ہوسکی۔ ایجنسیوں نے کہا کہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی لکھنو، دہلی اور غازی آباد میں دہشت گردانہ حملے کراسکتی ہے۔

ایجنسیوں نے دیا مشورہ

سیکورٹی ایجنسیوں نے دہلی ہوائی اڈے پربھی احتیاط برتنے کا مشورہ دیا ہے۔ اس دہشت گردانہ حملے میں کسی وی وی آئی پی کوبھی نشانہ بنایا جاسکتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی قومی دارالحکومت دہلی کے 17 علاقوں کو انتہائی حساس قراردیا گیا ہے۔ ایجنسیوں نے مشورہ دیا ہے کہ سبھی گاڑیوں کی کئی لیئرمیں چیکنگ ہو۔ بتایا گیا کہ پاکستان کی دہشت گرد تنظیم جیش محمد قومی دارالحکومت دہلی کو نشانہ بنا سکتے ہیں۔ بتایا جارہا ہے کہ دہشت گرد بسوں اور دیگرنقل وحمل کی گاڑیوں کے ذریعہ دہلی میں داخل ہوسکتے ہیں۔ سیکورٹی ایجنسیوں نے کہا ہےکہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی ہندوستان میں ماحول خراب کرنے کی کوشش کرسکتی ہے۔

Loading...