کشمیرمیں دہشت گردوں کی کائرانہ حرکت، ٹرک ڈرائیورکے بعد مزدورکا گولی مارکرقتل

دہشت گردوں نے پلوامہ میں ایک مزدورکا قتل کردیا۔ یہ مزدورچھتیس گڑھ کا رہنے والا تھا۔ مرنے والے کی شناخت سیتھی کمارکے طورپرہوئی ہے۔

Oct 16, 2019 04:37 PM IST | Updated on: Oct 16, 2019 04:56 PM IST
کشمیرمیں دہشت گردوں کی کائرانہ حرکت، ٹرک ڈرائیورکے بعد مزدورکا گولی مارکرقتل

کشمیرمیں حکومت نے14 اکتوبرسے پوسٹ پیڈ خدمات پرعائد پابندی ہٹا دی گئی ہے۔ فائل فوٹو

سری نگر: جموں وکشمیرمیں تیزی سے معمول پرآرہے حالات سے بوکھلائے دہشت گرد اب لوگوں میں بندوق کے دم پرخوف کا ماحول قائم کرنا چاہتے ہیں۔ دو دن پہلے کشمیرمیں دہشت گردوں نےایک ٹرک ڈرائیورکا گولی مارکرقتل کردیا تھا۔ بدھ 16 اکتوبرکودہشت گردوں نے پلوامہ میں ایک مزدورکا قتل کردیا۔ یہ مزدورچھتیس گڑھ کا رہنے والا تھا۔ مرنے والے کی شناخت سیتھی کمارکے طورپرہوئی ہے۔ وہ یہاں پراینٹ بھٹے میں کام کرتا تھا۔

پولیس جنرل ڈائریکٹردلباغ سنگھ نے بتایا کہ سیتھی کمارجب ایک دیگرعام شہری کے ساتھ ٹہل رہےتھے، تبھی کاک پورہ ریلوے اسٹیشن کے پاس نہاما علاقے میں دودہشت گردوں نے انہیں گولی ماردی۔ انہوں نےبتایا 'قاتلوں کوپکڑنے کے لئے ہم نے مختلف مقامات پر ٹیمیں بھیجی ہیں'۔ ان کے مطابق عینی شاہدین نےبتایا کہ حادثہ میں دودہشت گرد شامل تھے۔ پیر14 اکتوبرکودہشت گردوں نے راجستھان کے رہنے والےایک ٹرک ڈرائیورکا قتل کردیا تھا۔ پولیس کےمطابق دہشت گرد یہ کائرانہ حرکت بوکھلاہٹ میں کررہے ہیں۔ کشمیرسے سیب کا ٹرانسپوٹیشن (نقل وحمل) بحال ہونے کے سبب دہشت گرد ایسی حرکتیں کررہے ہیں۔

واضح رہےکہ 72 دنوں کے بعد پیرکو جموں وکشمیرمیں پوسٹ پیڈ موبائل خدمات شروع ہوئی تھیں۔ حالانکہ پریپیڈ موبائل خدمات اورانٹرنیٹ خدمات ابھی بھی بند ہیں۔ پہلےاس کے اکتوبرمیں شروع ہونےکی امید تھی، لیکن اب اس کے نومبرمیں شروع ہونےکی امید کی جا رہی ہے۔ مقامی لوگوں کےمطابق پیرکوٹرک ڈرائیورکا قتل ایک دہشت گرد نےکیا ہے، اس کا تعلق پاکستان سے ہے۔ وہیں مزدورکے قتل کے معاملے میں پولیس کا کہنا ہے کہ یہ واردات پلوامہ کےکاک پورہ علاقے میں ہوئی۔ اس کے بعد پورے علاقے کوگھیرکرسرچ آپریشن چلایا جارہا ہے۔

Loading...