உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Kuwaitمیں یرغمال بنایا گیا جوڑا گھر لوٹا، مقامی پولیس اور ہندوستانی سفارتخانے کو مدد کے لئے ادا کیا شکریہ

    کویت میں ہراسانی کا شکار مہاراشٹر کے جوڑے کو بھروسہ سیل کی مدد سے وطن واپس لایا گیا۔

    کویت میں ہراسانی کا شکار مہاراشٹر کے جوڑے کو بھروسہ سیل کی مدد سے وطن واپس لایا گیا۔

    Couple Captive in Kuwait Returns Home: پولیس افسر شندے نے کہا، ’اسی دوران متاثرہ خاتون کسی طرح بھئیندر میں رہنے والے اپنے دوست کے رابطے میں آئی اور کویت کے اسپتال کی تصویر شیئر کی اور اپنے آپ کو اور اپنے شوہر کو بچانے کی التجا کی۔

    • Share this:
      Couple Captive in Kuwait Returns Home:مہاراشٹرا کے تھانے ضلع سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون اور اس کے شوہر کا زیادہ پیسہ کمانے اور بہتر زندگی گزارنے کے لیے کویت جانے کا خواب اس وقت چکنا چور ہو گیا جب ان کے آجر نے ان کا استحصال کیا اور دونوں کو یرغمال بنا لیا۔ لیکن تھانے پولیس کے 'بھروسہ' سیل کی کوششوں اور کویت میں ہندوستانی سفارت خانے کی مدد کے نتیجے میں یہ جوڑا بحفاظت ہندوستان واپس آگیا ہے۔ ایک پولیس افسر نے بدھ کو یہ معلومات دی۔ جوڑے نے مدد کے لیے مقامی پولیس اور ہندوستانی سفارت خانے کا شکریہ ادا کیا ہے۔

      میرا بھائیندر وسائی ویرار (ایم بی وی وی) پولیس کے 'بھروسہ' سیل کی اسسٹنٹ پولیس انسپکٹر تیجا شری شندے نے بتایا کہ تھانے ضلع کے بھیاندر کی رہنے والی ایک خاتون نے کچھ دیر پہلے شکایت درج کرائی تھی کہ کویت میں ایک گھریلو ملازمہ اور اس کے شوہر کو ان کے آجر نے یرغمال بنا لیاہے۔ خاتون نے پولیس کو بتایا کہ وہ اس جوڑے کو جانتی ہے کیونکہ وہ پہلے بھی ان کے ساتھ کام کر چکی ہے۔

      تیج شری شندے نے کہا، ’اس نے اپنی شکایت میں کہا کہ یہ جوڑا اس سال 5 اپریل کو ایک ریکروٹمنٹ ایجنسی کے ذریعے کویت گیا تھا۔ اسے کویتی شہری نے گھریلو ملازمہ کے طور پر رکھا ہوا تھا۔ انہیں 40,000 روپے ماہانہ تنخواہ دینے کا وعدہ کیا گیا تھا۔ اسے گھر کے کاموں اور کھانا پکانے کے علاوہ دو بچوں کی دیکھ بھال کا کام سونپا گیا تھا۔‘بعدازاں ان سے 22 گھنٹے کام لیا جانے لگا جس سے خاتون کو اسپتال میں بھرتی کرایا گیا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      Mukhtar Abbas Naqvi Resigns:نقوی کے استعفے کے بعد مودی کیبنٹ میں ایک مسلم وزیر نہیں

      یہ بھی پڑھیں:

      Food Security:فوڈ سیکورٹی ایکٹ لاگو کرنے میں اتراکھنڈہواپیچھے،اوڈیشہ پہلے توUPدوسرے نمبرپر

      پولیس افسر شندے نے کہا، ’اسی دوران متاثرہ خاتون کسی طرح بھئیندر میں رہنے والے اپنے دوست کے رابطے میں آئی اور کویت کے اسپتال کی تصویر شیئر کی اور اپنے آپ کو اور اپنے شوہر کو بچانے کی التجا کی۔‘ شکایت کنندہ خاتون ایم بی وی وی کے 'بھروسہ' سیل پہنچی۔ پولیس اور جوڑے کو بچانے کے لیے مدد طلب کی۔اس کے بعد ایم بی وی وی پولیس نے کویت میں ہندوستانی سفارت خانے سے رابطہ کیا اور مدد طلب کی۔ ایم بی وی وی پولیس اور کویت میں ہندوستانی سفارت خانے کی کوششوں سے جوڑے کو بحفاظت نکال کر ہندوستان لایا گیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: