ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کی حالت میں کوئی بہتری نہیں، اب بھی وینٹیلیٹر پر

سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی (Pranab Mukherjee) کی حالت مسلسل نازک بنی ہوئی ہے اور وہ لائف سپورٹ سسٹم (Life Support System) پر ہیں۔

  • Share this:
سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کی حالت میں کوئی بہتری نہیں، اب بھی وینٹیلیٹر پر
سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کی حالت میں کوئی بہتری نہیں، اب بھی وینٹیلیٹر پر

نئی دہلی: سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی (Pranab Mukherjee) کی حالت میں کوئی سدھار نہیں ہوا ہے۔ آرمی اسپتال کی طرف سے جاری تازہ میڈیکل بلیٹن کے مطابق، ان کی حالت اب بھی نازک ہے اور وہ لائف سپورٹ سسٹم (Life Support System) پر ہیں۔ واضح رہے کہ انہیں سنگین حالت میں 0 اگست کو فوج کے اسپتال (R & R) دہلی کینٹ میں داخل کیا گیا تھا۔ اسپتال میں جانچ کے دوران دماغ میں خون کے تھکے ہونے کی بات سامنے آئی اور اس کے بعد بعد ان کی سرجری ہوئی۔ سرجری کے بعد سے وہ وینٹیلٹر پر ہیں۔ اس سے قبل بھی فوج کے ریسرچ اینڈ ریفرل اسپتال نے بدھ کو ایک بیان میں کہا، ’پرنب مکھرجی کی حالت مسلسل نازک بنی ہوئی ہے۔ اس وقت ان کی حالت خون کے بہاؤ کے لحاظ سے ٹھیک ہے اور وہ وینٹیلیٹر پر ہیں۔




پیر کے روز اسپتال میں کرائے گئے داخل

سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی (84 سال) کو پیر کو یہاں آرمی اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا اور دماغ کی سرجری سے پہلے ان کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی تھی۔ ان کی نگرانی کر رہے ڈاکٹروں نے کہا کہ منگل کو سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کی حالت بگڑ گئی اور ان کی حالت میں سدھار کی کوئی علامت نظر نہیں آرہی ہے۔ سابق صدر جمہوریہ کی بیٹی اور کانگریس لیڈر شرمشٹھا مکھرجی نے اپنے والد کے صحتیاب ہونے کے لئے خدا سے دعا کی ہے۔

 



شرمشٹھا مکھرجی نے کیا ٹوئٹ

انہوں نے ٹوئٹ کیا، ’گزشتہ سال 8 اگست کا دن میرے لئے سب سے زیادہ خوشی کے دنوں میں سے ایک تھا، جب میرے والد کو بھارت رتن ملا تھا۔ ٹھیک ایک سال بعد 10 اگست کو وہ سنگین طور پر بیمار ہوگئے’۔ شرمشٹھا مکھرجی نے لکھا، ’ان کے والد کے لئے جو بھی بہتر ہو، خدا وہ کریں اور مجھے زندگی میں آنے والی خوشی اور دکھ کے لمحات کو بہتر طریقے سے سہنے کی طاقت فراہم کریں۔ میں ان کے لئے فکر کرنے والے سبھی لوگوں کا شکریہ ادا کرتی ہوں’۔

 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 13, 2020 07:42 AM IST