ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

خواجہ سرا نے انعام کی رقم نہ ملنے پر ناراض ہوکر تین ماہ کی بچی کا قتل کردیا

انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کےگھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔ جب ممبئی پولیس کو اس معاملے کی اطلاع ملی تو خواجہ سرا کو اور اس کے ایک ساتھی کے ساتھ گرفتار کرلیا۔

  • Share this:
خواجہ سرا  نے انعام کی رقم نہ ملنے پر ناراض ہوکر تین ماہ کی بچی کا قتل کردیا
خواجہ سرا نے انعام کی رقم نہ ملنے پر ناراض ہوکر تین ماہ کی بچی کا قتل کردیا

ممبئی: انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔ جب ممبئی پولیس کو اس معاملے کی اطلاع ملی تو خواجہ سرا کو اور اس کے ایک ساتھی کے ساتھ گرفتار کرلیا۔ واقعہ ممبئی کے کف پریڈ علاقے کا ہے، جہاں 3 ماہ قبل ایک جوڑے کو بیٹی پیدا ہوئی تھی، جس کی خوشی میں خواجہ سرا اپنے کچھ ساتھیوں کے ساتھ جوڑے کے گھر پہنچا۔


انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔ جب ممبئی پولیس کو اس معاملے کی اطلاع ملی تو خواجہ سرا کو اور اس کے ایک ساتھی کے ساتھ گرفتار کرلیا۔
انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔ جب ممبئی پولیس کو اس معاملے کی اطلاع ملی تو خواجہ سرا کو اور اس کے ایک ساتھی کے ساتھ گرفتار کرلیا۔


بیٹی کے والد اور والدہ کی طرف سے انعام کے طور پرخوشی کا اظہار کیا۔ 1100 روپئے نقد، ایک ناریل۔ اور ساڑی کا مطالبہ کیا۔ لڑکی کے اہل خانہ نے خواجہ سرا کا یہ مطالبہ مسترد کردیا، پھر انعام کی رقم نہ ملنے کے بعد خواجہ سرا نے اپنے ایک مرد ساتھی کی مدد سے رات کو اس لڑکی کو گھر سے اغوا کرلیا۔ جیسے ہی لڑکی غائب ہوئی، گھر میں ہنگامہ برپا ہوگیا اور بچی کی والدہ نے کف پریڈ پولیس اسٹیشن میں جاکر لڑکی کی گمشدگی کی رپورٹ درج کروائی اور پھر جیسے ہی یہ رپورٹ درج کی گئی۔


انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔
انعام کی رقم نہ ملنے پر خواجہ سرا نے پہلے 3 ماہ کی بیٹی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر اسے بے دردی سے قتل کردیا۔


پولیس نے تفتیش شروع کردی اور یہ انکشاف ہوا کہ انعام کی رقم نہ ملنے کی وجہ سے خواجہ سراؤں نے بچی کو اغوا کیا اور اس کا کردیا، اب خواجہ سرا اور اس کا ساتھی پولیس کی تحویل میں ہیں۔ اس پورے معاملے میں پولیس نے بچی کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے اسپتال بھیج دیا ہے اور اسی کے ساتھ ہی  پولیس اب اس خواجہ سرا اور اس کے ساتھیوں سے یہ جاننے میں مصروف ہے کہ اس سے قبل بھی ان لوگوں نے کہیں کوئی جرم تو نہیں کیا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 10, 2021 06:01 PM IST