اپنا ضلع منتخب کریں۔

    S-400 ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کا پہلا بیڑہ پنجاب سیکٹر میں ہوگا تعینات، چین-پاکستان کو ملے گا چیلنج

    ہندوستان نے روس کے ساتھ اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کو لے کر 35 ہزار کروڑ روپے کی ڈیل کی ہے۔ اس ڈیل کے تحت، روس، ہندوستان کو اس میزائل سسٹم کی 5 اسکواڈرن سونپے گا۔ اس میزائل سسٹم کی مدد سے آسمان سے آنے والے خطرے کو 400 کلومیٹر کی دوری تک مار گرایا جاسکتا ہے۔

    ہندوستان نے روس کے ساتھ اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کو لے کر 35 ہزار کروڑ روپے کی ڈیل کی ہے۔ اس ڈیل کے تحت، روس، ہندوستان کو اس میزائل سسٹم کی 5 اسکواڈرن سونپے گا۔ اس میزائل سسٹم کی مدد سے آسمان سے آنے والے خطرے کو 400 کلومیٹر کی دوری تک مار گرایا جاسکتا ہے۔

    ہندوستان نے روس کے ساتھ اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کو لے کر 35 ہزار کروڑ روپے کی ڈیل کی ہے۔ اس ڈیل کے تحت، روس، ہندوستان کو اس میزائل سسٹم کی 5 اسکواڈرن سونپے گا۔ اس میزائل سسٹم کی مدد سے آسمان سے آنے والے خطرے کو 400 کلومیٹر کی دوری تک مار گرایا جاسکتا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ملک کے ایئر ڈیفنس سسٹم کو مضبوطی دیتے ہوئے ہندوستانی فضائیہ (IAF) S-400 ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم (S-400 Air Defense Missile System) کیپہلی اسکواڈرن کو پنجاب سیکٹر میں تعینات کرنے جارہی ہے۔ انڈین ایئرفورس کے اس قدم سے چین اور پاکستان (China and Pakistan) کی جانب سے آسمان کے ذریعے آنے والے ہر چیلنج سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ حکومت کے ذرائع نے نیوز ایجنسی اے این آئی کو اس بات کی اطلاع دی ہے۔

      سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ایس-400 ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کی پہلی اسکواڈرن کو پنجاب میں تعینات کیا جائے گا۔ اس ایئر ڈیفنس سسٹم کی تعیناتی سے چین اور پاکستان سے آسمان کے ذریعے ملنے والے ہر چیلنج سے نمٹنے میں آسانی ہوگی۔

      4 الگ الگ صلاحیت والی میزائلوں سے لیس ایئر ڈیفنس سسٹم
      روس سے ملنے والے اس میزائل سسٹم کے پارٹ اس مہینے کی شروعات میں ہندوستان پہنچنا شروع ہوگئے ہیں اور اس کی یونٹ کو اگلے کچھ ہفتہ میں آپریشنلائزڈ کیے جانے کی امید ہے۔ ہندوستان نے روس کے ساتھ اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کو لے کر 35 ہزار کروڑ روپے کی ڈیل کی ہے۔ اس ڈیل کے تحت، روس، ہندوستان کو اس میزائل سسٹم کی 5 اسکواڈرن سونپے گا۔ اس میزائل سسٹم کی مدد سے آسمان سے آنے والے خطرے کو 400 کلومیٹر کی دوری تک مار گرایا جاسکتا ہے۔

      اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کی پہلی اسکواڈرن کی ڈیلیوری اس سال کے آخر تک ہونے کی امید ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اس میزائل سسٹم کے آلات کو سمندر اور فضائی راستوں سے ہندوستان لایا جاچکا ہے۔ ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ اس پہلی اسکواڈرن کی تعیناتی کے بعد، ہندوستانی فضایہ اپنا دھیان مشرقی سرحدوں پر مرکوز کرنا شروع کرے گی۔

      ہندوستانی فضائیہ کے عہدیداروں اور ملازمین نے روس جا کر اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم سے متعلق ٹریننگ لی ہے۔ روس سے ملنے والے اس میزائل سسٹم کی بدولت جنوبی ایشیا میں فضائیہ کی طاقت میں اضافہ ہوگا۔ اس ایئر ڈیفنس میزائل سسٹم کی مدد سے آسمانس ے آنے والے دشمن ممالک کے ایئرکرافٹ اور کروز میزائل کو 400 کلومیٹر کی دوری تک مارا جاسکتا ہے۔ یہ میزائل سسٹم 4 الگ الگ قسم کی میزائلوں سے لیس ہوگا جن کی مارنے کی صلاحیت سلسلہ وار 400، 250اور 120 و 40 کلومیٹر تک ہوگی۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: