ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پلوامہ حملے کی سازش میں اہم کامیابی، کار مالک کی ہوئی شناخت، حزب المجاہدین سے ہے وابستہ

بتایا جاتا ہے کہ اس حملے کے لئے جس سینٹرو کار کا استعمال کیا گیا تھا، اس کے مالک کی شناخت ہوگئی ہے۔ اس کار میں تقریباً 45 کلو گرام دھماکہ خیز مادہ رکھا ہوا تھا۔

  • Share this:
پلوامہ حملے کی سازش میں اہم کامیابی، کار مالک کی ہوئی شناخت، حزب المجاہدین سے ہے وابستہ
پلوامہ حملے کی سازش میں اہم کامیابی، کار مالک کی ہوئی شناخت

سری نگر: جمعرات کو جموں وکشمیر (Jammu-Kashmir) میں سیکورٹی اہلکاروں کی مستعدی سے پلوامہ (Pulwama) جیسا ایک اور حملہ ناکام کردیا گیا۔ دہشت گردوں کے اس پلان کو لے کر مسلسل نئے انکشاف ہو رہے ہیں۔ کہا جارہا ہے کہ اس حملے کے لئے جس سینٹرو کار کا استعمال کیا گیا تھا، اس کے مالک کی شناخت ہوگئی ہے۔ اس کار میں تقریباً 45 کلو گرام دھماکہ خیز مادہ رکھا ہوا تھا۔


حزب المجاہدین کا دہشت گرد ہے مالک


انگریزی ویب سائٹ انڈیا ٹوڈے نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ کار کے مالک کی شناخت ہوگئی ہے۔ اس کار کا مالک حزب المجاہدین سے وابستہ مبینہ  دہشت گرد ہے۔ جموں وکشمیر ک شوپیاں میں رہنے والے اس مبینہ دہشت گرد کا نام ہدایت اللہ ہے۔ یہ دہشت گرد سال 2019 سے دہشت گردانہ سرگرمیوں کو انجام دیتا آرہا ہے۔ واضح رہے کہ پلوامہ ضلع میں سیکورٹی اہلکاروں نے کار میں رکھے 40 سے 45 کلو آئی ای ڈی کو وقت رہتے ڈی فیوز کردیا۔


جمعرات کو جموں وکشمیر میں سیکورٹی اہلکاروں کی مستعدی سے پلوامہ جیسا ایک اور حملہ ناکام کردیا گیا۔
جمعرات کو جموں وکشمیر میں سیکورٹی اہلکاروں کی مستعدی سے پلوامہ جیسا ایک اور حملہ ناکام کردیا گیا۔


کار پر موٹر سائیکل کی نمبر پلیٹ

دھماکہ خیز اشیا سے بھری کار پر جو نمبر پلیٹ تھا وہ ایک موٹر سائیکل کا نمبر ہے اور یہ موٹر سائیکل ضلع کٹھوعہ سے رجسٹرڈ ہے۔ پولیس نے اس موٹر سائیکل کو ضبط کر لیا ہے۔ یہ موٹر سائیکل بی ایس ایف کے جوان ساحل کمار کے نام پر رجسٹرڈ ہے اور یہ جوان اس وقت ریاست سے باہر اپنی ڈیوٹی پر ہے۔ ضلع سنبھاگ کے رہنے والے ساحل کمار نے یہ موٹر سائیکل ضلع کٹھوعہ سے خریدی تھی۔ فی الحال موٹر سائیکل کو ضل کٹھوعہ کے پولیس اسٹیشن ہیرا نگر میں ضبط کرکے رکھا ہواہے۔ جبکہ فیمل کے باقی لوگوں سے پولیس جانکاری جمع کرنے میں مصروف ہے۔

خود کش حملے کی تھی سازش

کشمیر کے پولیس انسپکٹر جنرل وجے کمار نے کہا کہ حزب المجاہدین اور جیش محمد ایک ساتھ مل کر گزشتہ سال فروری میں خود کش حملے کی طرح ہی سیکورٹی اہلکاروں کو نشانہ بنانے کی سازش کر رہے تھے۔ گزشتہ سال ہوئے خود کش حملے میں سی آرپی ایف کے 40 سے زیادہ جوان شہید ہوگئے تھے۔ وجے کمار نے نامہ نگاروں سے کہا، ’پولیس کو ایک ہفتے سے حزب المجاہدین اور جیش محمد کے دہشت گردوں کے ذریعہ کار بم کا استعمال کرتے ہوئے سیکورٹی اہلکاروں پر بڑے حملے کی سازش کی اطلاع مل رہی تھی، جب بدھ کو اس موضوع میں مناسب جانکاری مل گئی تو ہم نے مزید چیزیں بھی جمع کیں اور سیکورٹی اہلکاروں نے پلوامہ میں ناکہ بندی کی، جس کے بعد اس حملے کو ناکام کردیا گیا۔
First published: May 29, 2020 10:36 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading