ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

ملک میں کورونا وائرس کی وباء کی دوسری لہرکا خطرہ کم، مہاراشٹر حکومت نے کہی یہ بات

ریاست مہاراشٹر وزیر برائے صحت عامہ راجیش ٹوپے نے اس خیال کا اظہار کیا ہے کہ ریاست میں کورونا کی دوسری لہر کا امکان نہیں ہے۔ ٹوپے نے یہ بھی واضح کیا کہ ریاستی حکومت دوسری لہر سے بھی نپٹنے کیلئے چاق وچوبند ہے۔

  • Share this:
ملک میں کورونا وائرس کی وباء کی دوسری لہرکا خطرہ کم، مہاراشٹر حکومت نے کہی یہ بات
ملک میں کورونا وائرس کی وباء کی دوسری لہرکا خطرہ کم

ممبئی: یوروپی ممالک میں کورونا وباء کی دوسری لہرکی آمد کے سبب بھارت بھی فکر مند ہوگیا ہے۔ ریاستیں دوسری لہر سے نپٹنے کیلئے ریاستیں بھی اپنے لحاظ سے تیاریوں میں مصروف ہوگئی ہیں۔ البتہ ہندوستان میں دوسری لہر کی آمد کا بہت کم امکان ظاہر کیا جارہا ہے۔ گزشتہ ماہ اکتوبر کے آخری ہفتے میں ریاست مہاراشٹر میں ایک مرتبہ پھر کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں معمولی اضافہ درج کیا گیا۔ لہٰذا ماہرین اس بات کو سمجھنے کی کوشیش میں ہیں کہ کیا یہ کورونا وائرس کی دوسری لہر ہے۔


تاہم ریاست مہاراشٹر وزیر برائے صحت عامہ راجیش ٹوپے نے اس خیال کا اظہار کیا ہے کہ ریاست میں کورونا کی دوسری لہر کا امکان نہیں ہے۔ ٹوپے نے یہ بھی واضح کیا کہ ریاستی حکومت دوسری لہر سے بھی نپٹنے کیلئے چاق وچوبند ہے۔ وزیر صحت راجیش ٹوپے کے مطابق، وزارتِ صحت عامہ کے اعلی حکام نے کابینہ کے روبرو پریزنٹیشن پیش کرتے ہوئے وضاحت کی کہ ہمارے ملک میں کورونا کی دوسری لہر کی آمد کے امکانات نہایت ہی کم ہیں۔ اس کم امکان سے نپٹنے کیلئے ماسک لگانا، سماجی فاصلہ برقرار رکھنا، سنیٹائزرکا استعمال اشد ضروری اور لازمی ہے۔


راجیش ٹوپے نےکہا کہ فرانس، اسپین سمیت یورپ کے کئی ممالک کو اس وقت کورونا کی دوسری لہر کا سامنا ہے۔ نتیجے کے طور پر بہت سے یورپی ممالک نے دوبارہ لاک ڈاؤن لگادیا ہے۔ ہم اس پورے معاملے پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اندازہ لگارہے ہیں کہ کیا ہندوستان میں بھی کورونا کی دوسری لہر کی آمد ممکن ہے، لیکن ہمارے ملک میں کورونا کی ایک اور لہر آنے کا امکان کم ہے۔ وزیر برائے صحت نے کہا کہ دیوالی کا تیوہار نہایت ہی قریب ہے۔ میں عوام سے گزارش کرتا ہوں کہ دیوالی کے موقع پر گھر سے باہر نکلتے وقت اور خریداری کرتے وقت احتیاط سے کام لیں۔ ریاست مہاراشٹر میں عبادت گاہوں کو دوبارہ کھولنے کے معاملے میں کہا کہ ہم عبادت گاہوں بند رکھنے کی حمایت میں نہیں ہیں۔ لیکن موجودہ صورت حال کے مدِ نظر وزیراعلیٰ مہاراشٹر دیوالی کے بعد ہی کچھ فیصلہ لے پائیں گے۔ واضح رہے کہ عبادت گاہوں کو کھولنے کی اجازت نہ دینے پر اپوزیشن جماعتوں نے مہاراشٹر کی اگھاڑی سرکار کو تنقید کا نشانہ بنا یا ہے اور عبادت گاہوں کھولنے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔ ٹوپے نے اعداد و شمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ریاست میں کورونا وباء کے ایام میں ایک ہی دن میں 23 ہزار سے زیادہ کورونا مثبت مریض پائے گئے ہیں۔ اکتوبر کے آخری ہفتے میں یہ تعداد تین ہزار 6 سو 45 ہوگئی تھی، لیکن اس میں ایک مرتبہ پھر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ اکتوبر کے آخری ہفتے میں یہ تعداد روزآنہ 6 ہزار تک پہنچتی ہوئے دکھائی دی ہے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 02, 2020 10:49 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading