ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شہریت ترمیمی قانون اور این آرسی کےخلاف احتجاج کے درمیان این پی آر کوملی کابینہ کی منظوری

شہریت قانون اورقومی شہری رجسٹرکے خلاف جاری احتجاجی مظاہروں کے درمیان مرکزی کابینہ اب قومی آبادی رجسٹر یعنی نیشنل پاپولیشن رجسٹرکومنظوری دیدی ہے

  • Share this:
شہریت ترمیمی قانون اور این آرسی کےخلاف احتجاج کے درمیان این پی آر کوملی کابینہ کی منظوری
شہریت ترمیمی قانون اور این آرسی کےخلاف احتجاج کے درمیان این پی آر کوملی کابینہ کی منظوری

شہریت قانون اورقومی شہری رجسٹرکے خلاف جاری احتجاجی مظاہروں کے درمیان مرکزی کابینہ اب قومی آبادی رجسٹر یعنی نیشنل پاپولیشن رجسٹرکومنظوری دیدی ہے۔ مرکزی کابینہ نے منگل کو تقریباً 2 گھنٹے تک جاری رہنے والی اس میٹنگ میں این پی آر کوکومنظوری دیدی ہے۔کابینہ نے این پی آرکواپ ڈیٹ کرنے کے لئے 8500 کروڑروپئے کے بجٹ کی بھی منظوری دی ہے۔ اب 1 اپریل 2020 ملک بھر میں مردم شماری شروع ہوگی




مرکزی وزارت داخلہ  کے حکام نے بتایا کہ این پی آر کو اپ ڈیٹ کرنے کا عمل آئندہ برس پہلی اپریل سے شروع ہوسکتی ہے۔ این پی آر اپ ڈیٹنگ کے عمل میں آسام کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔ آسام کو چھوڑ کر ملک کی دیگرریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں یہ عمل اپریل سے ستمبر کے بیچ جاری رہے گا۔حکام کا کہناہے کہ اس عمل کے تحت عام شہریوں کی گنتی کی جا ئیگی۔این پی آر کے تحت عام شہری سے مراد ایسا شخص ہے جو کسی علاقے میں چھ مہینے یا اس سے زائد عرصے سے رہ رہا ہو یا آئندہ چھ مہینے یا اس سے زیادہ اس علاقے میں قیام کا اس کا ارادہ ہو۔

این پی آر کیا ہے؟

وزارت داخلہ کے مطابق ،نیشنل پاپولیشن رجسٹر (این پی آر) کے تحت، 1 اپریل 2020 سے 30 ستمبر 2020 تک ملک بھر میں گھر-گھر مردم شماری کے ذریعہ شہریوں کا ڈیٹا بیس تیار کرنے کا منصوبہ ہے۔ این پی آر کا بنیادی مقصد ملک کے عام باشندوں کی جامع شناخت کا ڈیٹا بیس بنانا ہے۔ اس ڈیٹا میں بائیو میٹرک معلومات کے ساتھ ساتھ ڈیموگرافکس بھی شامل ہوں گے۔

مردم شماری 2021۔(تصویر:نیوز18)۔
مردم شماری 2021۔(تصویر:نیوز18)۔


مردم شماری آغاز1اپریل 2020 سےہوگا۔

این پی آرکوتیار کرنے میں تقریباً تین سال لگ سکتے ہیں۔ اس کا عمل تین مراحل میں ہوگا۔ پہلا مرحلہ 1 اپریل 2020 سے شروع ہوگا۔ 30 ستمبر کے درمیان ، وسطی اور ریاستی سرکاری ملازمین گھر۔ گھر جاکرآبادی کے اعداد و شمار جمع کریں گے۔ این پی آر کا دوسرا مرحلہ 2021 میں 9 فروری اور 28 فروری کے درمیان مکمل ہوگا۔ تیسرے مرحلے کے تحت، ترمیم کا عمل 1مارچ سے 5 مارچ تک کیا جائے گا۔

این پی آر اور این آر سی فرق کیا ہے؟

این پی آر اور این آر سی سے مختلف ہے۔ اگرچہ این آر سی کامقصد ملک میں موجودغیرقانونی شہریوں کی نشاندہی کرناہے ، لیکن مقامی علاقے میں 6 ماہ یا اس سے زیادہ عرصہ تک رہنے والے کسی بھی باشندے کو لازمی طورپراین آر پی کے ساتھ اندراج کروانا ہوگا۔ اگرکوئی غیرملکی چھ ماہ سے ملک کے کسی بھی حصے میں رہ رہا ہے ، تو اسے بھی اپنی تفصیلات این پی آر میں درج کروانی ہوں گی۔

مردم شماری آغاز1اپریل 2020 سےہوگا
مردم شماری آغاز1اپریل 2020 سےہوگا


کس نے بنایا تھا این پی آر کا منصوبہ

این پی آر کا اقدام سب سے پہلے سن 2010 میں یو پی اے حکومت نے اٹھایا تھا۔ پھراس پر کام 2011 کی مردم شماری سے پہلے شروع کیا گیا تھا۔ اب 2021 میں دوبارہ مردم شماری کرنی ہے۔ اس معاملے میں ، این پی آرپربھی کام شروع کیا جا رہا ہے

 
First published: Dec 24, 2019 02:54 PM IST