ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: فوج اور پولیس کی مشترکہ آپریشن، کپواڑہ میں لشکر سے وابستہ 3 مقامی ملی ٹینٹ گرفتار

ایس ایس پی کپواڑہ کے بقول تینوں ملی ٹینٹوں نے لشکر سے وابستگی اختیار کرلی تھی اور وہ اس علاقے میں مقامی سطح پر ملی ٹینسی کو منظم کرنے کی کوششوں میں لگ چکے تھے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: فوج اور پولیس کی مشترکہ آپریشن، کپواڑہ میں لشکر سے وابستہ 3 مقامی ملی ٹینٹ گرفتار
جموں وکشمیر: کپواڑہ میں لشکر سے وابستہ 3 مقامی ملی ٹینٹ گرفتار

کپواڑہ: جموں وکشمیر کے کپواڑہ ضلع کے لولاب علاقے میں فوج اور پولیس نے ایک مشترکہ آپریشن کے دوران ملی ٹینٹوں کی صفوں میں شامل ہونے والے تین مقامی نوجوانوں کو اسلحہ سمیت گرفتارکرلیا ہے اوران کے قبضے سے گولہ بارود بھی برآمد کرنےکا دعویٰ کیا گیا ہے۔ ایس ایس پی کپواڑہ رمیشن امبارکار نے کپواڑہ میں میڈیا کو پریس بریفنگ دینے ہوئے جانکاری دی ہے کہ گزشتہ روز تین ہتھیار بند نوجوانوں کی ایک تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھی اور اس میں یہ ظاہر کیا گیا تھا کہ لولاب علاقے سے تین نوجوانوں نے ہتھیار اٹھا لے ہیں۔ چنانچہ سوشل میڈیا پر وائر ل ہوئی تصویر کا پولیس اور فوج نے سخت نوٹس لیا، جس کے فوراً بعد پولیس اور فوج نے مشترکہ طور پر ان تینوں ملی ٹینٹوں کو ڈھونڈ نکالنے کے لئے آپریشن شروع کر دیا اور محض 24 گھنٹوں کے اندر اندر ہی پولیس اور فوج نے مشترکہ کاروائی انجام دیتے ہوئے آج صبح تینوں ملی ٹینٹوں کو گرفتارکرلیا، جس کا تعلق لشکر طیبہ تنظیم سے ہے۔


ایس ایس پی کپواڑہ کے بقول تینوں ملی ٹینٹوں نے لشکر سے وابستگی اختیار کرلی تھی اور وہ اس علاقے میں مقامی سطح پر ملی ٹینسی کو منظم کرنے کی کوششوں میں لگ چکے تھے۔ ایس ایس پی نے تین مقامی ملی ٹینٹوں کی گرفتاری کو بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس کارروائی کے نتیجے میں اس علاقے میں لشکر کا مقامی گروہ کا پردہ فاش ہوگیا ہے۔


پولیس کے مطابق تینوں ملیٹینٹوں سے ہتھیار اور گول بارود بھی برآمد کرلیا گیا ہے جبکہ مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ اسی دوران فوج کے 28 آر آر سے وابستہ بریگیڈیئر نے پریس کانفرنس کے دوران میڈیا کو بتایا کہ امن دشمن کارروائیوں کی کسی بھی طور پر اجازت نہیں دی جاسکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کا نیٹ ورک قبل از وقت ہی بے نقاب کر دیا گیا ہے کیونکہ اگر ان ملی ٹینٹوں کو مہلت مل جاتی تو وہ دیگر نوجوانوں کو بھی اپنی طرف مائل کرتے اور یوں جنگجووں کی ایک نئی صف تیار ہوجاتی ہے۔


پولیس کے مطابق تینوں ملیٹینٹوں سے ہتھیار اور گول بارود بھی برآمد کرلیا گیا ہے جبکہ مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ فائل فوٹو
پولیس کے مطابق تینوں ملیٹینٹوں سے ہتھیار اور گول بارود بھی برآمد کرلیا گیا ہے جبکہ مزید تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ فائل فوٹو


انہوں نے مزید کہا کہ یہ علاقہ پُر امن ہے اور اس طرح کی کارروائیوں کے نتیجے میں ملی ٹینٹوں کےخلاف دباو بڑھانے میں مدد ملتی ہے۔ چنانچہ محض 24 گھنٹوں کے اندر اندر لشکر کے مقامی نیٹ ورک کو بے نقاب کرنا اپنے آپ میں بڑی کامیابی ہے۔ بریگیڈیئرکا کہنا ہے کہ وہ والدین سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ اپنے بچوں پر کڑی نگاہ رکھیں اور انہیں ملی ٹینٹی کارروائیوں سے دور رہیں۔ فوج کے بریگیڈیئر کا مزید کہنا تھا کہ ان علاقوں میں امن وامان کو بہتر بنانے کی ہر ممکن کوشش کی جائےگی اور ایسے میں امن دشمن عناصر کےخلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائےگی۔ اس واقعہ کے فوراً بعد لولاب میں فوج نے ایک عوامی جانکاری کیمپ کا انعقاد کیا، جس میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے شرکت کی۔

اس موقع پر 28 آر آر سے وابستہ بریگیڈیئر نے لوگوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنے بچوں کو امن وامان کے لئے راغب کریں اور ملی ٹینسی کاروائیوں سے دور رہیں۔ انہوں نے لوگوں سے کہا کہ لولاب اور دیگر علاقے پُر امن ہیں اور وہاں امن وامان ہی عوام کے مفاد میں ہے، لہٰذا لوگ امن کے قیام کے لئے فوج کے ساتھ تعاون کریں۔ انہوں نے خبردار کیا کہ ملی ٹینسی کارروائیوں میں ملوث کسی بھی فرد کو چھوڑا نہیں جائے گا۔ اس موقع پر فوج نے لوگوں کو کووڈ-19 یعنی کورونا وائرس بیماری سے متعلق سے نجات دینے کے لئے احتیاطی تدابیر سے بھی ر وشناس کرایا۔
First published: May 22, 2020 12:26 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading