உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سدھو کے استعفی پر کیپٹن نے کہا : میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ وہ مستحکم آدمی نہیں ہیں !

    سدھو کے استعفی پر کیپٹن نے کہا : میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ وہ مستحکم آدمی نہیں ہیں ! (Twitter)

    سدھو کے استعفی پر کیپٹن نے کہا : میں نے پہلے ہی کہا تھا کہ وہ مستحکم آدمی نہیں ہیں ! (Twitter)

    Navjot Singh Sidhu Resignation: کیپٹن سنگھ نے اپنے لئے طویل عرصے سے سیاسی سردرد بنے اپنے پرانے کابینی معاون سدھو کے استعفے پرٹوئٹ کیا کہ ’’میں نے پہلے ہی آپ سے کہا تھا کہ وہ (سدھو) مستحکم آدمی نہیں ہے اور وہ سرحدی پنجاب ریاست کے لئے ٹھیک نہیں ہیں۔‘‘

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی  : ہم نے تو پہلے ہی کہا تھا …… یہ تبصرہ نوجوت سنگھ سدھو کے پنجاب پردیش کانگریس کے صدر کے عہدے سے استعفیٰ دینے پر کانگریس لیڈر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب کیپٹن امریندر سنگھ نے کیا ۔ کیپٹن سنگھ نے اپنے لئے طویل عرصے سے سیاسی سردرد بنے اپنے پرانے کابینی معاون سدھو کے استعفے پرٹوئٹ کیا کہ ’’میں نے پہلے ہی آپ سے کہا تھا کہ وہ (سدھو) مستحکم آدمی نہیں ہے اور وہ سرحدی پنجاب ریاست کے لئے ٹھیک نہیں ہیں۔‘‘

      واضح رہے کہ سدھو کیپٹن امریندر سنگھ کی حکومت میں وزیر رہے تھے لیکن اختلافات کی وجہ سے انہوں نے استعفیٰ دے دیا تھا۔ بعد میں ان کے اختلافات منظر عام پر آئے اور دونوں نے ایک دوسرے کے خلاف عوامی سطح پر تبصرہ کرنے میں کوئی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کی۔


      سدھو کے ساتھ تنازع کی وجہ سے کیپٹن نے بالآخر سدھو کے ساتھ جھگڑے کے دوران عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ اپنے استعفیٰ کے وقت بھی کیپٹن نے کہا تھا کہ سدھو جیسا شخص پنجاب جیسی سرحدی ریاست کے لیے اچھا نہیں ہے۔

      قابل ذکر ہے کہ کیپٹن امریندر آج چنڈی گڑھ سے دہلی پہنچے ہیں۔ یہ بات بحث کا موضوع ہے کہ یہاں بھارتیہ جنتا پارٹی کے بڑے لیڈر سے ان کی ملاقات ہوسکتی ہے۔ دہلی روانگی سے قبل چنڈی گڑھ میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کیپٹن امریندر نے بی جے پی سے اپنے رابطے کے بارے میں سوالات پر کہا کہ یہ سب محض قیاس آرائیاں ہیں۔ ایسا کچھ نہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ دہلی کے کپورتھلہ ہاؤس میں اپنا کچھ سامان لینے جا رہے ہیں ۔

      بتادیں کہ نوجوت سنگھ سدھو نے کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی کو بھیجے گئے اپنے استعفیٰ میں لکھا ہے کہ ایک انسان کے کردار کا زوال سمجھوتے سے شروع ہوتا ہے۔ میں پنجاب کے مستقبل اور بھلائی کے ساتھ کبھی سمجھوتہ نہیں کرسکتا۔ ایسے میں، میں پنجاب کانگریس صدر کے عہدے سے استعفیٰ دیتا ہوں۔ میں کانگریس کے لئے کام کرتا رہوں گا‘۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: