ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال اسمبلی:شہریت قانون کے خلاف آج پیش کی جائے گی قرارداد

کیرل ، پنجاب اورکی ڈگر پرمغربی بنگال حکومت چل رہی ہے۔ شہریت قانون کے خلاف قرارداد آج مغربی بنگال اسمبلی میں پیش کی جائے گی۔

  • Share this:
مغربی بنگال اسمبلی:شہریت قانون  کے خلاف آج پیش کی جائے گی قرارداد
مغربی بنگال اسمبلی:شہریت قانون کے خلاف آج پیش کی جائے گی قرارداد

کیرل ، پنجاب اورکی ڈگر پرمغربی بنگال حکومت چل رہی ہے۔ شہریت قانون کے خلاف قرارداد آج مغربی بنگال اسمبلی میں پیش کی جائے گی۔295 رکنی مغربی بنگال اسمبلی میں ترنمول کانگریس کو اکثریت حاصل ہے اس لیے اس قرارداد کو منظور ہونے کی راہ آسان ہے۔مغربی بنگال حکومت اُصولولی طور پر شہریت قانون کی مخالفت کررہی ہے۔حالانکہ اسمبلی میں قرارداد پیش نہ کیے جانے پرترنمول حکومت کی اپوزیشن جماعتیں مخالفت کررہی تھیں۔


بنگال میں حراستی کیمپ قائم کرنے نہیں دیا جائے گا:ممتا بنرجی


تلنگانہ اسمبلی میں منظور ہوگی قرارداد


تلنگانہ کے وزیراعلیٰ چندرشیکھر راؤ نے اعلان کیا ہےکہ شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے خلاف ریاستی اسمبلی میں قرارداد منظور کی جائے گی۔انہوں نے ریاست میں بلدیات اور کارپوریشن کے انتخابات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اسمبلی کے بجٹ سیشن میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف قرارداد منظورکی جائے گی۔

تلنگانہ کے وزیراعلیٰ چندر شیکھر راؤ: فائل فوٹو
تلنگانہ کے وزیراعلیٰ چندر شیکھر راؤ: فائل فوٹو


چندرشیکھر راؤ نے بتایا کہ انہوں نے شہریت ترمیمی قانون کے سلسلے میں دیگر ریاستوں کے وزرائے اعلی اورسیاسی جماعتوں کے رہنماوں سے بات چیت کی ہے اور ایک ماہ کے اندر شہرحیدرآباد میں شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت کرنے والے وزرائے اعلی اورعلاقائی جماعتوں کا اجلاس طلب کیا جائےگا۔ انہوں نے بتایا کہ شہریت ترمیمی قانون میں مسلمانوں کو شامل نہ کرنے پرانھیں تکلیف پہنچی ہے۔ انہوں نےکہا 'ہم جلد ہی علاقائی جماعتوں کا اجلاس منعقد کریں گے۔ ہم سی اے اے کے خلاف 10 لاکھ افراد کے ساتھ مظاہرہ کریں گے'۔ واضح رہےکہ دیگر ریاستوں نے پہلے ہی سی اے اے کی مخالفت کرنےکی قرارداد منظور کی ہے۔
First published: Jan 27, 2020 10:27 AM IST