உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Twin Towers Blast:نوئیڈا میں ڈرون اڑانے پر پابندی، NDRF کی ٹیم رہے گی تعینات

    تقریباً 5,000 سے زیادہ رہائشی ایمرالڈ کورٹ ( Emerald Court) اور اے ٹی ایس ولیج سوسائٹیوں (ATS Village societies) کو خالی کریں گے۔ (Image: Twitter)

    تقریباً 5,000 سے زیادہ رہائشی ایمرالڈ کورٹ ( Emerald Court) اور اے ٹی ایس ولیج سوسائٹیوں (ATS Village societies) کو خالی کریں گے۔ (Image: Twitter)

    Twin Towers Blast : ۔ این ڈی آر ایف کی ٹیم انہدام سے دو گھنٹے پہلے اور دو گھنٹے بعد تک وہاں تعینات رہے گی۔ حالات معمول پر آنے کے بعد ہی ٹیم وہاں سے روانہ ہوگی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Uttar Pradesh | Noida
    • Share this:
      Twin Towers Blast :ٹوئن ٹاور گرانے کی پوری تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں۔ ٹاور اتوار کو گرادیا جائے گا۔ اس درمیان نوئیڈا پولیس نے شہر میں ڈرون کے استعمال پر پابندی لگادی ہے۔ یہ پابندی 31 اگست تک رہے گی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ پابندی سیکورٹی وجوہات کی بنا پر لگائی گئی ہے۔

      مسماری کے حوالے سے ضلعی انتظامیہ بھی الرٹ ہے۔ جمعرات کو انتظامیہ نے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ (انتظامیہ) کی قیادت میں افسران کی ایک ٹیم تعینات کی ہے۔ اس کے علاوہ ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے تحت چار اسپتالوں کو محفوظ کیا گیا ہے۔ نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (NDRF) کی ٹیم کو بھی بلایا گیا ہے جو انہدام سے دو گھنٹے پہلے اور دو گھنٹے بعد تک تعینات رہے گی۔

      ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ (انتظامیہ) ڈاکٹر نتن مدن کو نوڈل آفیسر بنایا گیا ہے۔ ان کے ساتھ سٹی مجسٹریٹ نوئیڈا سمیت چار ڈپٹی کلکٹر اور دیگر عہدیداروں کو ذمہ داری دی گئی ہے۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے بتایا کہ نوئیڈا کی جے پی، فیلکس اور ضلع اسپتال کو انہدام کے دن کے لیے محفوظ اسپتال قرار دیا گیا ہے۔ یہ تمام اسپتال ٹوئن ٹاورز کے آس پاس ہیں۔ ان کے علاوہ تقریباً دس اسپتالوں کو الرٹ پر رکھا جائے گا۔

      نوئیڈا اتھارٹی کے کنٹرول روم میں ڈپٹی کلکٹر کومل پوار کی ڈیوٹی لگائی گئی ہے۔ ساتھ ہی، سی ایم او اور آئی ایم اے کے ایک ڈاکٹر بھی وہاں موجود رہیں گے۔ ہر نقل و حرکت پر نظر رکھی جائے گی تاکہ آفت کی صورت میں فوری راحت پہنچائی جا سکے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      ملک کا نوجوان’آؤٹ آف دی باکس‘ جاکر سوچ رہا ہے،اسمارٹ انڈیا ہیکاتھون 2022سے پی ایم کاخطاب

      یہ بھی پڑھیں:
      Jharkhand Political Crisis:خطرے میں سی ایم سورین کی کرسی،آج سی ایم ہاؤس پرہوگی اہم میٹنگ!

      این ڈی آر ایف کی ٹیم کو بھی طلب کیا گیا ہے۔ ٹوئن ٹاوروں کو گرانے میں این ڈی آر ایف ٹیم کا کوئی رول نہیں ہوگا، لیکن اگر کوئی آفت پیدا ہوتی ہے تو اس حالت میں این ڈی آر ایف کی ٹیم مورچہ سنبھالے گی۔ این ڈی آر ایف کی ٹیم انہدام سے دو گھنٹے پہلے اور دو گھنٹے بعد تک وہاں تعینات رہے گی۔ حالات معمول پر آنے کے بعد ہی ٹیم وہاں سے روانہ ہوگی۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: