ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

New IT Rules:دہلی ہائی کورٹ نے کہا ’’ڈیجیٹل میڈیا کے لئے ٹویٹر کو نئے آئی ٹی قواعد پر عمل کرنا ہی ہوگا‘‘

دہلی ہائی کورٹ (Delhi High Court) نے کہا کہ ’’اگر اسے برقرار رہنا ہے تو اسے ان قواعد پرعمل کرنا ہوگا ہی ہوگا‘‘۔ وکیل آکاش واجپائی اور منیش کمار کے ذریعہ دائر اپنی درخواست میں اچاریہ نے کہا کہ انہیں مبینہ عدم تعمیل کے بارے میں معلوم ہوا جب کچھ ٹویٹس کے خلاف شکایت درج کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔

  • Share this:
New IT Rules:دہلی ہائی کورٹ نے کہا ’’ڈیجیٹل میڈیا کے لئے ٹویٹر کو نئے آئی ٹی قواعد پر عمل کرنا ہی ہوگا‘‘
اسی عمارت میں ٹویٹرکا دفتر ہے

دہلی ہائی کورٹ (Delhi High Court) نے پیر کے روز کہا کہ ٹویٹر (Twitter) کو ڈیجیٹل میڈیا کے لئے انفارمیشن ٹکنالوجی کے نئے قواعد (New Rules for Information Technology ) کی تعمیل کرنی ہوگی۔ جسٹس ریکھا پلی (Justice Rekha Palli) نے مرکز اور سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹویٹر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے وکیل امیت آچاریہ (Amit Acharya) کی جانب سے اس ضوابط کی تعمیل نہ کرنے کا دعویٰ کرتے ہوئے ان کی درخواست پر اپنا مؤقف مانگا ہے۔


جب کہ ٹویٹر نے عدالت کے روبرو یہ دعویٰ کیا ہے کہ اس نے قواعد کی تعمیل کی ہے اور ایک مقام شکایت افسر (Resident Grievance Officer) مقرر کیا ہے، لیکن مرکزی حکومت نے اس دعوے پر اختلاف کیا۔



دہلی ہائی کورٹ (Delhi High Court) نے کہا کہ ’’اگر اسے (ٹویٹر کو)برقرار رہنا ہے تو اسے ان قواعد پرعمل کرنا ہوگا ہی ہوگا‘‘۔ وکیل آکاش واجپائی اور منیش کمار کے ذریعہ دائر اپنی درخواست میں اچاریہ نے کہا کہ انہیں اس بات کی اطلاع ملی ہے کہ  انفارمیشن ٹکنالوجی کے نئے قواعد مبینہ طورپرعمل آوری نہیں کی جارہی ہے جب کچھ ٹویٹس کے خلاف شکایت درج کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔

ٹویٹر ابھی بھی اصولوں پر نہیں کررہا ہےعمل

ہفتے کے روز سرکاری ذرائع نے بتایا کہ گوگل ، فیس بک اور واٹس ایپ جیسی بڑی بڑی سوشل میڈیا کمپنیوں نے نئے ڈیجیٹل قواعد کے مطابق وزارت آئی ٹی کے ساتھ تفصیلات شیئر کیں ہیں ، لیکن ٹویٹر اب بھی ان اصولوں پر عمل نہیں کررہا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ٹویٹر نے چیف تعمیل آفیسر کی تفصیلات آئی ٹی وزارت کو ارسال نہیں کیں اور ایک وکیل کی نوڈل لاسیسن شخص اور شکایات افسر کے طور پر کام کرنے والی ایک وکیل کی تفصیلات ایک قانونی فرم میں شیئر کیں۔ انہوں نے کہا ، یہ تب ہے جب آئی ٹی کے قواعد و ضوابط کے تحت بڑے سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے ان نامزد افسران کو کمپنی کے ملازمین اور ہندوستان میں رہائشی ہونے کی ضرورت ہوتی ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 31, 2021 05:50 PM IST