உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Noida Twin Towers Demolition: تاریخ کا حصہ بن گئے نوئیڈا کے ٹوئن ٹاورس، بارود سے محض 7 سیکنڈ میں زمیں دوز ہوگئے

    تاریخ کا حصہ بن گئے نوئیڈا کے ٹوئن ٹاورس، بارود سے محض 7 سیکنڈ میں زمیں دوز ہوگئے

    تاریخ کا حصہ بن گئے نوئیڈا کے ٹوئن ٹاورس، بارود سے محض 7 سیکنڈ میں زمیں دوز ہوگئے

    سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق آج دوپہر 2:30 بجے ٹوئن ٹاور زمیں دوز کر دیئے گئے۔ ممبئی کی کمپنی ایڈفکس انجنیئرنگ اور جنوبی افریقی اتحادی جیٹ انہدام نے ہفتہ کے روز دونوں ٹاوروں کے انہدام کی پوری تیاری کے ساتھ زمیں دوز کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Gautam Buddha Nagar, India
    • Share this:
      نئی دہلی: نوئیڈا سیکٹر-93 اے واقع سپر ٹیک ایمرالڈ کورٹ کے ٹوئن ٹاور کے انہدامی کارروائی ہوگئی ہے۔ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق آج دوپہر 2:30 بجے ٹوئن ٹاور زمیں دوز کر دیئے گئے۔ ممبئی کی کمپنی ایڈفکس انجنیئرنگ اور جنوبی افریقی اتحادی جیٹ انہدام نے ہفتہ کے روز دونوں ٹاوروں کے انہدام کی پوری تیاری کے ساتھ زمیں دوز کیا۔ 32 منزلہ ایپکس (100 میٹر) اور 29 منزلہ سیان (97 میٹر) ٹاور میں 3700 کلو گرام دھماکہ خیز مواد لگاکر تاروں سے جوڑا گیا تھا۔ اہم تار کو ایک بٹن سے جوڑ دیا گیا، جسے دور سے پریس کرنے کے ساتھ ہی دھماکہ ہوا اور ٹوئن ٹاور 12سیکنڈ میں زمیں دوز ہوگئے۔ احتیاطاً آس پاس کی سڑکوں کو بند رکھا گیا ہے۔ پورے علاقے کو نو فلائنگ زون کا اعلان کیا گیا ہے۔



      ٹوئن ٹاورس کے منہدم ہونے کے بعد پورے علاقے میں چھائی دھول کی غبار

      اترپردیش کے نوئیڈا واقع ٹوئن ٹاور کے منہدم ہونے کے بعد پورے علاقے میں کافی دھول اور گردوغبار دیکھنے کو مل رہی ہے۔ حالانکہ ٹوئن ٹاور کے انہدام سے پہلے ہی فضائی آلودگی کو دیکھتے ہوئے موثر اقدامات کئے گئے ہیں اور پورے علاقے کو خالی کرا دیا گیا ہے۔



      آس پاس کے سوسائٹی کے باشندوں کے لئے رہنے اور کھانے کا انتظام کیا گیا

      ٹوئن ٹاورس کے آس پاس کی سڑکوں پر بیریکیڈنگ کردی گئی ہے اور لوگوں کی آمدورفت پر پوری طرح سے روک لگا دی گئی ہے۔ پارشوناتھ سوسائٹی نے ایمرالڈ کورٹ کے 200 لوگوں کے لئے اپنے کلب ہاوس اور گیسٹ ہاوس میں شام تک رہنے کا انتظام کیا گیا ہے۔ اسی طرح کا انتظام سلور سٹی سوسائٹی میں بھی کی گئی ہے۔ لوگ پڑوس کی سوسائٹی میں جا رہے ہیں اور شام تک وہیں رہیں گے۔ انہدام کے مکمل ہونے پر ایڈیفس کمپنی کے افسر انہیں ایمرالڈ کورٹ میں لوٹنے کا اشارہ دیں گے۔

      اس سے قبل سپرٹیک ٹوئن ٹاور منہدم کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر تیاری کی گئی تھی اور دھماکہ کرنے والی ٹیم پوری طرح سے چاق وچوبند تھی۔ ٹاور کو منہدم کئے جانے کے بعد ملبے سے فضائی آلودگی کا خطرہ اور دیگر پریشانیاں ہونے کے پیش نظر تمام احتیاطی تدابیر کئے گئے تھے۔ کسی بھی ایمرجنسی صورتحال سے نمٹنے کے لئے کنٹرول روم 28 اگست صبح چھ بجے سے 30 اگست تک چوبیس گھنٹے آپریٹ کیا گیا ہے۔ عام شہری کسی بھی پریشانی سے متعلق کنٹرول روم میں 0120-2425301, 0120-2425302, 0120-2425025 شکایت کرسکتے ہیں۔
      اے بی نیوز کی رپورٹ کے مطابق، نوئیڈا اتھارٹی کی سی ای او ریتو ماہیشوری نے بتایا تھا کہ ٹاور منہدم کئے جانے کے بعد فضائی آلودگی کو جانچنے کے لئے چھ مقامات پر مینوئل ایمبیئنٹ ایئر کوالٹی مانیٹرنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ اس کی آپریٹنگ ہفتہ کے روز سے ہی کردی گئی ہے۔ اس کے علاوہ نوئیڈا اتھارٹی کے آئی ٹی ایم ایس کے علاوہ لائیو مانیٹرنگ اسٹیشن بھی ہوا کی شفافیت کی نگرانی کر رہے ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: