உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Omicron Variant: کورونا سے متعلق گائڈ لائن کو لے کر مرکزی حکومت اور مہاراشٹر حکومت کے درمیان رسہ کشی

    کورونا سے متعلق گائڈ لائن کو لے کر مرکز اور مہاراشٹر حکومت کے درمیان رسہ کشی

    کورونا سے متعلق گائڈ لائن کو لے کر مرکز اور مہاراشٹر حکومت کے درمیان رسہ کشی

    Coronavirus Omicron Variant: کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران (Coronavirus Omicron Variant) کے پیش نظر نافذ کئے گئے گائڈ لائن کو لے کر مرکزی حکومت اور مہاراشٹر حکومت آمنے سامنے آگئے ہیں۔ مرکز نے بدھ کو مہاراشٹر حکومت کو بتایا کہ اومیکران کے خطرے کے پیش نظر بین الاقوامی مسافروں پر اس کے ذریعہ لگائی گئی پابندی وزارت صحت کے ذریعہ 28 نومبر کو جاری ایس او پی سے الگ ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران (Coronavirus Omicron Variant) کے پیش نظر نافذ کئے گئے گائڈ لائن کو لے کر مرکزی حکومت اور مہاراشٹر حکومت آمنے سامنے آگئے ہیں۔ مرکز نے بدھ کو مہاراشٹر حکومت کو بتایا کہ اومیکران کے خطرے کے پیش نظر بین الاقوامی مسافروں پر اس کے ذریعہ لگائی گئی پابندی وزارت صحت کے ذریعہ 28 نومبر کو جاری ایس او پی سے الگ ہیں۔ مرکزی صحت سکریٹری راجیش بھوشن نے ایک خط میں مہاراشٹر سے ریاستی حکومت کے ذریعہ جاری کئے گئے احکامات کو وزارت صحت کی گائڈ لائن کے مطابق کرنے کی گزارش کی ہے۔

      گائڈ لائن کا خصوصی ذکر

      راجیش بھوشن کے خط میں چار گائڈ لائن کا خصوصی طور پر ذکر کیا ہے، اس میں اول ممبئی ایئر پورٹ پر سبھی بین الاقوامی مسافروں کا لازمی آرٹی-پی سی آر ٹسٹ، چاہے وہ کسی بھی ملک کا ہو، دوسرا آنے پر آر ٹی - پی سی آر ٹسٹ نگیٹیو ہونے کے باوجود، سبھی بین الاقوامی مسافروں کے لئے لازمی 14 دن کا ہوم کوارنٹائن، تیسرا ممبئی میں لینڈنگ کے بعد کنیکٹنگ فلائٹ شروع کرنے کا منصوبہ بنا رہے مسافروں کے لئے لازمی آرٹی- پی سی آر چیکنگ اور نگیٹیو آر ٹی-پی سی آر نتیجے آنے کے بعد ہی آگے کا سفر، چوتھا دیگر ریاستوں سے مہاراشٹر کا سفر کرنے والے گھریلو مسافروں کے لئے سفر کی تاریخ سے 48 گھنٹے پہلے نگیٹیو آرٹی-پی سی ٹسٹ رپورٹ نافذ ہونا ضروری ہے، شامل ہیں۔

      مہاراشٹر حکومت کو وزارت صحت نے دیا یہ حکم

      راجیش بھوشن نے مہاراشٹر حکومت کو حکم دیا ہے کہ وہ مرکز کی طرف سے جاری گائڈ لائنس پر عمل کریں، جس سے کہ سبھی ریاستوں/مرکز کے زیر انتظام تمام ریاستوں میں رہنما خطوط کے یکساں نفاذ کو یقینی بنایا جاسکے۔ مرکز نے کورونا وائرس کے نئے ویریئنٹ اومیکران کو لے کر پیدا ہوئی تشویشات کے درمیان منگل کو ریاستوں اور مرکز کے زیر انظام ریاستوں کو کسی معاملے کی جلد پہچان کے لئے جانچ بڑھانے، بیرون ممالک سے آنے والے مسافروں کی موثر نگرانی کرنے اور ’ہاٹ اسپاٹ‘ کی سخت نگرانی کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Pakistan vs Bangladesh: پاکستان کے گیند بازی مشیر نے میچ کے درمیان ہی چھوڑ دیا ٹیم کا ساتھ، اب گھر لوٹنے کو تیار


      حالانکہ مرکز نے یہ بھی انڈر لائن کیا کہ ایسا نہیں ہے کہ سارس- سی او وی-2 کا اومیکران ویریئنٹ آر ٹی پی سی آر اور آر اے ٹی جانچ کی پکڑ میں نہیں آتا۔ ہاٹ اسپاٹ وہ مقام ہوتا ہے، جہاں زیادہ تعداد میں کووڈ-19 کے معاملے سامنے آتے ہیں۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: