ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

محبوبہ مفتی کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نےکہا- ترنگے کی توہین قبول نہیں

اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے جموں و کشمیر کی سابق وزیراعلی محبوبہ مفتی کے ترنگے کے سلسلے میں دئے گئے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترنگے کی توہین بالکل بھی برداشت نہیں ہے۔

  • Share this:
محبوبہ مفتی کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے مرکزی وزیر  پرکاش جاوڈیکر نےکہا- ترنگے کی توہین قبول نہیں
محبوبہ مفتی کے بیان کی مذمت کرتے ہوئے مرکزی وزیر نےکہا- ترنگے کی توہین قبول نہیں۔

نئی دہلی: اطلاعات و نشریات کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے جموں و کشمیر کی سابق وزیراعلی محبوبہ مفتی کے ترنگے کے سلسلے میں دیئے گئے بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترنگے کی توہین بالکل بھی برداشت نہیں ہے۔ پرکاش جاوڈیکر نے پیر کو ٹویٹ کرکے کہا،’’ترنگا ہندوستان کی شان ہے، ترنگا ہندوستان کی پہچان ہے۔‘‘ واضح رہے کہ  جموں وکشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے اپنی رہائی کے بعد اعلان کیا تھا کہ وہ جموں و کشمیر کے علاوہ دوسرا کوئی پرچم نہیں اٹھائیں گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ جس وقت جموں و کشمیر کا پرچم واپس آئے گا، اس دن وہ ترنگے کو بھی اٹھالیں گی۔


محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ جب تک کشمیر میں دوبارہ آرٹیکل 370 بحال نہیں ہو جاتا اور انہیں جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس نہیں مل جاتا وہ ترنگا نہیں تھامیں گی۔
محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ جب تک کشمیر میں دوبارہ آرٹیکل 370 بحال نہیں ہو جاتا اور انہیں جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس نہیں مل جاتا وہ ترنگا نہیں تھامیں گی۔


وہیں دوسری جانب محبوبہ مفتی کے اس بیان پر بی جے پی جارحانہ رخ اختیار کئے ہوئے ہے۔ محبوبہ مفتی کے بیان کی مخالفت میں بی جے پی پیر کو سری نگر سے کپواڑہ تک ترنگا یاترا نکال رہی ہے۔ وہیں، کپواڑہ میں بی جے پی کارکن سری نگر کے مشہور لال چوک پہنچے اور ترنگا لہرانے کی کوشش کی۔ حالانکہ، اس دوران بی جے پی کارکنان کو پولیس نے پکڑ لیا اور 4 بی جے پی کارکنان کو حراست میں لیا گیا۔ پچھلے دنوں محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ جب تک کشمیر میں دوبارہ آرٹیکل 370 بحال نہیں ہو جاتا اور انہیں جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس نہیں مل جاتا وہ ترنگا نہیں تھامیں گی۔


نیوز ایجنسی یو این آئی اردو کے اِن پُٹ کے ساتھ
Published by: Nisar Ahmad
First published: Oct 26, 2020 04:48 PM IST