ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اناؤ ریپ متاثرہ کے بھائی نے کہا: لاش میں جلانے کے لئے کچھ بھی نہیں بچا، گاؤں میں دفنائیں گے

متاثرہ کے بھائی نے اپنی بہن کیلئے انصاف کی مانگ کرتے ہوئے سنیچر کو کہا کہ ملزموں کا بھی وہی حشر ہونا چاہئے جو اس کی بہن نے جھیلا۔

  • Share this:
اناؤ ریپ متاثرہ کے بھائی نے کہا: لاش  میں جلانے کے لئے کچھ بھی نہیں بچا، گاؤں میں دفنائیں گے
متاثرہ کے بھائی نے اپنی بہن کیلئے انصاف کی مانگ کرتے ہوئے سنیچر کو کہا کہ ملزموں کا بھی وہی حشر ہونا چاہئے جو اس کی بہن نے جھیلا۔

زندگی کی جنگ ہار گئی اناؤ ریپ متاثرہ کے بھائی نے بہن کو لیکر دل کو جنجھوڑ کر رکھ دینے والی بات کہی ہے۔ متاثرہ کے بھائی نے اپنی بہن کیلئے انصاف کی مانگ کرتے ہوئے سنیچر کو کہا کہ ملزموں کا بھی وہی حشر ہونا چاہئے جو اس کی بہن نے جھیلا۔ انہوں نے صحافیوں سے کہا اس نے مجھ سے منت کی، بھائی مجھے بچا لو۔ انہوں نے کہا میں نے اس سے کہا تھا کہ تمہیں کچھ نہیں ہوگا بچا لیا جائے گا، فکر مت کرو۔ میں بھی دکھی ہوں کہ میں اسے بچا نہیں سکا'۔

وہیں بہن کی آخری رسوم کو لیکر انہوں نے کہا کہ اس میں جلانے کے لائق کچھ بھی بچا نہیں ہے۔ ہم نعش کو اپنے گاؤں لے جائیں گے اور وہیں دفنائیں گے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ مجرم انکاؤنٹر میں مارے جاتے ہیں یا پھانسی پر لٹکائے جاتے ہیں اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ انہیں زندہ نہیں رہنا چاہئے۔ یہی ہم چاہتے ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں: جب تک ہوش میں رہی اناؤ ریپ متاثرہ، پوچھتی رہی، میں بچ تو جاؤں گی؟ قصورواروں کو چھوڑنا نہیں

بتا دیں کہ  اناؤ ریپ  متاثرہ آخرکار زندگی کی جنگ ہار گئی۔ جمعہ کی رات 11:40 پر صفدر جنگ اسپتال میں اس کی موت ہوگئی جس کی اطلاع متاثرہ کی بہن نے دی۔ اسپتال کے برن اور پلاسٹک سرجری ڈپارٹمنٹ کے ایچ او ڈی ڈاکٹر شلبھ کمار نے متاثرہ کی موت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ رات 11:40 پر متاثرہ کے قلب نے کام کرنا بند کردیا تھا۔ ڈاکٹر کی تمام کوششوں کے باوجود اس کی حالت میں کوئی سدھار نہیں ہوا اور 11:40 پر جمعہ کی رات اس کا انتقال ہو گیا۔

حالانکہ 90 فیصد سے بھی زیادہ جل چکی یوپی کی اس 'نربھیا' نے اب بھی ہار نہیں مانی تھی۔ جمعرات کی رات 9 بجے تک وہ ہوش میں تھی۔ جب تک ہوش میں تھی کہتی رہی مجھے جلانے والوں کو چھوڑنا مت۔ پھر نیند میں چلی گئی۔ ڈاکٹرو ں نے ہر ممکن کوشش کی، وینٹی لیٹر پر رکھا۔ لیکن وہ نیند سے نہیں اٹھی اور دنیا چھوڑ کر چلی گئی۔ انصاف کی جنگ لڑتے لڑتے ایک اور نربھیا زندگی کی جنگ ہار گئی۔

First published: Dec 07, 2019 11:21 AM IST