اناو عصمت دری معاملہ: سی بی آئی نے ایک دیگر ملزم ششی پرتاپ کو گرفتارکیا

اناو عصمت دری اور قتل معاملہ میں سی بی آئی نے ایک اور ملزم ششی پرتاپ عرف سمن کو گرفتار کیاہے۔ الزام ہے کہ سمن نے ممبراسمبلی کے بھائی اتل اور اس کے ساتھیوں کو فون کرکے گاوں میں بلایا تھا۔

May 06, 2018 06:32 PM IST | Updated on: May 06, 2018 06:32 PM IST
اناو عصمت دری معاملہ: سی بی آئی نے ایک دیگر ملزم ششی پرتاپ کو گرفتارکیا

لکھنو: اناو عصمت دری اور قتل معاملہ میں سی بی آئی نے ایک اور ملزم ششی پرتاپ عرف سمن کو گرفتار کیاہے۔ الزام ہے کہ سمن نے ممبراسمبلی کے بھائی اتل اور اس کے ساتھیوں کو فون کرکے گاوں میں بلایا تھا۔ یہاں تنازعہ کے دوران متاثرہ کے والد سے کافی مارپیٹ کی گئی۔ واضح رہے کہ گزشتہ دنوں اناو عصمت دری معاملہ میں متاثرہ کے چچا الہ آباد ہائی کورٹ پہنچے۔

انہوں نے ہائی کورٹ  میں معااملے کی سماعت کے دوران کورٹ کے سامنے اپنا موقف رکھا۔ متاثرہ کے چچا سی بی آئی کی جانچ پر بھروسہ جتاتے ہوئے ہائی کورٹ سے انصاف کی امید ظاہر کی ہے۔ حالانکہ ابھی بھی عصمت دری کے ملزم اور قتل میں شامل ملزمین کھلے میں گھومنے اور پولیس انتظامیہ کے رویے پر انہوں نے سوال کھڑے کئے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ان کے بھائی کے خلاف مقدمہ درج کرانے والے ٹنکو سنگھ کا پتہ لگانے کا بھی مطالبہ کیاہے۔

Loading...

انہوں نے الزام لگایا کہ معاملے میں ملزم بی جے پی ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کے اناو جیل میں دربار لگارہے ہیں۔ یہی نہیں، ان کے حامیوں کے ذریعہ گاوں کے لوگوں کو ڈرایا اور دھمکایا جارہا ہے۔ عصمت دری کی متاثرہ کے چاچا نے مقدمہ کی سماعت دہلی ٹرانسفر کئے جانے کا بھی مطالبہ کیاہے۔

دوسرے معاملے میں الہ آباد ہائی کورٹ میں داخل عوا می مفاد کی عرضی پر گزشتہ بدھ کو سماعت ہوئی۔ سی بی آئی نے معاملے کی پیش رفت کی رپورٹ بند لفافے میں عدالت میں پیش کیا۔ عدالت نے سی بی آئی کی سست رفتار جانچ پر ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے پیش رفت رپورٹ دیکھنے کے بعد اسے سی بی آئی کو واپس کردیا۔

وہیں اناو عصمت دری معاملے میں متاثرہ کی ماں نے عدالت میں عرضی داخل کرکے اپنے شوہر کے خلاف آرمس ایکٹ میں فرضی ایف آئی آر درج کرانے والے ٹنکو سنگھ کے لاپتہ ہونے کے معاملے میں بھی جانچ کامطالبہ کیاہے۔ عصمت دری متاثرہ کی ماں نے عدالت سے مطالبہ کیا ہے کہ سی بی آئی اس بات کا پتہ لگائے کہ ٹنکو سنگھ کو غائب کرنے کے پیچھے کن لوگوں کا ہاتھ ہے۔ معاملے کی سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے سی بی آئی کو اس معاملے کی جانچ کو لے کر کئی احکامات دیئے۔

 

 

واضح رہے کہ اناو عصمت دری معاملہ میں سی بی آئی نے گزشتہ دنوں الہ آباد ہائی کورٹ میں اسٹیٹس رپورٹ داخل کی۔ ہائی کورٹ نے گزشتہ 13 اپریل کو معاملے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے سی بی آئی کو اس معاملے کی اسٹیٹس ر پورٹ دو مئی کی صبح 10 بجے پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

معاملے میں سی بی آئی نے لڑکی سے عصمت دری کے ملزم ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کی گرفتار ی سے لے کر، ان کے بھائی اتل سنگھ اور چار دیگر ملزمین کی گرفتاری اور ان سے پوچھ تاچھ کی پوری تفصیل تیار کرلی ہے۔ اس رپورٹ میں چاروں ایف آئی آر، متاثرہ کے بیان اور اب تک کی پیش رفت کی تفصیل بھی اس میں شامل کی گئی ہے۔

Loading...