ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اکھلیش حکومت نے ایودھیا میں تھیم پارک کا کیا اعلان ، مایاوتی نے سادھا نشانہ

دسهرے کے موقع پر وزیر اعظم مودی نے جب لکھنؤ میں جے شری رام کا نعرہ لگایا تو صاف ہو گیا کہ آنے والے وقت میں یوپی انتخابات کے بھنور کو پار کرنے کے لئے سیاست رام کے کندھے کا سہارا ضرور لے گی۔

  • IBN7
  • Last Updated: Oct 17, 2016 07:00 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اکھلیش حکومت نے ایودھیا میں تھیم پارک کا کیا اعلان ، مایاوتی نے سادھا نشانہ
دسهرے کے موقع پر وزیر اعظم مودی نے جب لکھنؤ میں جے شری رام کا نعرہ لگایا تو صاف ہو گیا کہ آنے والے وقت میں یوپی انتخابات کے بھنور کو پار کرنے کے لئے سیاست رام کے کندھے کا سہارا ضرور لے گی۔

اجودھیا : دسهرے کے موقع پر وزیر اعظم مودی نے جب لکھنؤ میں جے شری رام کا نعرہ لگایا تو صاف ہو گیا کہ آنے والے وقت میں یوپی انتخابات کے بھنور کو پار کرنے کے لئے سیاست رام کے کندھے کا سہارا ضرور لے گی۔مودی کے بعد اب سماجوادی پارٹی نے بھی رام کا سہارا لینے کی کوشش کی ہے۔ یوپی کابینہ نے فیصلہ لیا ہے اکھلیش حکومت ایودھیا میں بین الاقوامی تھیم پارک بنائے گی۔ یہ پارک رامائن کے موضوع پر بنے گا، جس میں لائبریری، مجسمے اور واٹر فال ہوں گے۔ پارک میں رامائن سے وابستہ تصاویر لگائی جائیں گی ۔ ساتھ ہی ساتھ پارک میں رامائن کی کہانیوں پر مبنی فلمیں بھی دکھائی جائیں گی۔ یہ بین الاقوامی تھیم پارک تقریبا 22 کروڑ کی لاگت سے بنے گا۔

سماج وادی پارٹی سے جب اس بارے میں سوال کیا گیا کہ کیا یہ انتخابی اعلان ہے ، تو ایس پی کا کہنا ہے کہ بھگوان رام سب کے ہیں۔ مخالفین کے پاس کوئی مدعا نہیں ہے۔ پارٹی کے ترجمان محمد شاہد نے کہا کہ بھگوان رام کسی ایک کے نہیں ہیں، ہماری حکومت پوری ریاست کی ترقی کر رہی ہے، ہم ایودھیا کی بھی ترقی کرتے رہے ہیں، ترقی کے لئے ہماری حکومت کے خلاف بولنے کے لئے کسی کے پاس کچھ نہیں ہے، تو فضول کی باتیں کی جا رہی ہیں۔

ادھر مرکزی حکومت کی وزارت ثقافت نے بھی ایودھیا میں رامائن میوزیم کی بنیاد رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ منگل کو مرکزی وزیر مہیش شرما ایودھیا پہنچ رہے ہیں۔ تاہم مہیش شرما کا کہنا ہے کہ حکومت کے اس فیصلہ کو انتخابات سے جوڑ کر نہیں دیکھا جانا چاہئے۔

وہیں بی ایس پی کی صدر مایاوتی نے رام کی سیاست کو لے کر بی جے پی اور ایس پی پر نشانہ سادھا ہے ۔ مایاوتی کا کہنا ہے کہ سماج وادی پارٹی اور بی جے پی مذہب کو سیاسی و انتخابی فائدے کیلئے استعمال کر رہی ہے۔ مایاوتی نے پوچھا ہے کہ آخر کیوں دونوں پارٹیوں کو انتخابات سے عین قبل رام کی یاد آئی ہے۔ مایا نے کہا کہ دونوں ہی حکومتوں کو یہ توجہ دینی ہوگی کہ ایودھیا تنازع کسی طرح سے متاثر نہ ہو ، کیونکہ یہ معاملہ سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے۔

First published: Oct 17, 2016 07:00 PM IST