உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UP Election 2022:یوپی میں ساتویں مرحلے کے لئے 9 ضلعوں کی 54 سیٹوں پر ووٹنگ کا آغاز،ان لیڈروں کی قسمت داؤ پر

    UP Election: یوپی الیکشن کے ساتویں مرحلہ کے لئے ووٹنگ کی ہوئی شروعات۔

    UP Election: یوپی الیکشن کے ساتویں مرحلہ کے لئے ووٹنگ کی ہوئی شروعات۔

    UP Election 2022: خاص بات یہ ہے کہ ساتویں مرحلے میں یوگی حکومت کے 7 وزراء کی ساکھ داؤ پر لگی ہے۔ ان میں پسماندہ طبقات کی بہبود کے وزیر انل راج بھر، رجسٹریشن کے وزیر مملکت رویندر جیسوال، وزیر ثقافت نیل کنٹھ تیواری، شہری منصوبہ بندی کے وزیر گریش یادو، توانائی کے وزیر مملکت راماشنکر سنگھ پٹیل، ریاستی وزیر برائے تعاون سنگیتا بلونت، ریاستی وزیر سنگیتا بلونت، ریاستی وزیر سنجیو گونڈ میدان میں ہیں۔

    • Share this:
      لکھنو: اترپردیش اسمبلی انتخابات(UP Assembly Election) کے آخری مرحلے کی ووٹنگ کا آغاز ہوگیا ہے۔ آخری مرحلے میں یوپی کے 9 اضلاع کی 54 سیٹوں پر ووٹنگ کی جارہی ہے۔ اس کے لیے الیکشن کمیشن(Election Commission) کی جانب سے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ ووٹنگ کا آغاز صبح 7 بجے سے شروع ہوا جو شام 6 بجے تک جاری رہے گا۔ ساتویں اور آخری مرحلے میں تمام جماعتوں کی ساکھ داؤ پر لگی ہوئی ہے۔ جن 54 سیٹوں پر آج ووٹنگ ہونی ہے ان میں وارانسی، غازی پور، چندولی، جونپور، اعظم گڑھ، مئو، مرزا پور، سون بھدرا اور بھدوہی شامل ہیں۔ تمام پارٹیوں کی نظریں پی ایم مودی(PM Modi) کے پارلیمانی حلقہ وارانسی پر لگی ہوئی ہیں۔


      ساتویں مرحلے میں 2 کروڑ 6 لاکھ ووٹر ہیں۔ ان میں 1 کروڑ 10 لاکھ مرد اور 96 لاکھ خواتین ووٹرز شامل ہیں۔ ساتھ ہی 1017 تیسری جنس کے ووٹرز بھی شامل ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ تمام ووٹرز 7 مارچ کو 613 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے۔ پیر کو ہونے والی 54 سیٹوں میں سے 29 سیٹوں پر بی جے پی، 11 ایس پی، 6 بی ایس پی اور 3 سہیل دیو پارٹی نے گزشتہ اسمبلی انتخابات میں جیتی تھیں۔ دوسری طرف نشاد پارٹی کو 1 سیٹ ملی تھی۔ سہیل دیو پارٹی نے 2017 کا الیکشن بی جے پی کے ساتھ مل کر لڑا تھا، لیکن اس بار وہ اکھلیش یادو کے ساتھ ہے۔


      یوگی حکومت کے 7 وزرا کی ساکھ داؤ پر
      الیکشن کے دوران پولیس اہلکاروں کو بھی کورونا گائیڈ لائنز پر عمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ساتویں مرحلے میں سب کی نظریں پی ایم مودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی پر ہیں۔ پی ایم مودی، اکھلیش یادو اور بی ایس پی سربراہ مایاوتی کی ساکھ داؤ پر لگ گئی ہے۔ دوسری طرف، او پی راج بھر، انوپریہ پٹیل اور سنجے نشاد کا بھی اس مرحلے میں سخت امتحان ہوگا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      UP Election 2022:وزیر اعلی بگھیل کا دعوی،چونکانے والے ہوں گے نتائج،کانگریس بنے گی کنگ میکر

      یہ بھی پڑھیں:
      شرد پوار کا سنسنی خیز دعویٰ نواب ملک کو داود ابراہیم سے جوڑا جا رہا ہےکیونکہ وہ مسلمان ہیں

      خاص بات یہ ہے کہ ساتویں مرحلے میں یوگی حکومت کے 7 وزراء کی ساکھ داؤ پر لگی ہے۔ ان میں پسماندہ طبقات کی بہبود کے وزیر انل راج بھر، رجسٹریشن کے وزیر مملکت رویندر جیسوال، وزیر ثقافت نیل کنٹھ تیواری، شہری منصوبہ بندی کے وزیر گریش یادو، توانائی کے وزیر مملکت راماشنکر سنگھ پٹیل، ریاستی وزیر برائے تعاون سنگیتا بلونت، ریاستی وزیر سنگیتا بلونت، ریاستی وزیر سنجیو گونڈ میدان میں ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: