உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Assembly Elections 2022: یوپی میں پانچویں مرحلے کی ووٹنگ جاری، ریتا بہوگنا جوشی نے کہا-300+ سیٹوں کے ساتھ حکومت بنائے گی بی جے پی

    پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات (Assembly Elections 2022) کے تحت اتوار کو اترپردیش میں پانچویں مرحلے کی ووٹنگ ہو رہی ہے۔ اس کے تحت 12 اضلاع کی 61 سیٹوں پر ووٹنگ کی جارہی ہے۔ اس مرحلے میں یوپی کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ، سدھارتھ ناتھ سنگھ، کانگریس لیڈر ارادھنا مشرا، پلوی پٹیل سمیت کئی لیڈروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگی۔

    پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات (Assembly Elections 2022) کے تحت اتوار کو اترپردیش میں پانچویں مرحلے کی ووٹنگ ہو رہی ہے۔ اس کے تحت 12 اضلاع کی 61 سیٹوں پر ووٹنگ کی جارہی ہے۔ اس مرحلے میں یوپی کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ، سدھارتھ ناتھ سنگھ، کانگریس لیڈر ارادھنا مشرا، پلوی پٹیل سمیت کئی لیڈروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگی۔

    پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات (Assembly Elections 2022) کے تحت اتوار کو اترپردیش میں پانچویں مرحلے کی ووٹنگ ہو رہی ہے۔ اس کے تحت 12 اضلاع کی 61 سیٹوں پر ووٹنگ کی جارہی ہے۔ اس مرحلے میں یوپی کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ، سدھارتھ ناتھ سنگھ، کانگریس لیڈر ارادھنا مشرا، پلوی پٹیل سمیت کئی لیڈروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگی۔

    • Share this:
      لکھنو: پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات (Assembly Elections 2022) کے تحت اتوار کو اترپردیش میں پانچویں مرحلے کی ووٹنگ ہو رہی ہے۔ اس کے تحت 12 اضلاع کی 61 سیٹوں پر ووٹنگ کی جارہی ہے۔ اس مرحلے میں یوپی کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ، سدھارتھ ناتھ سنگھ، کانگریس لیڈر ارادھنا مشرا، پلوی پٹیل سمیت کئی لیڈروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگی۔ بی جے پی رکن پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی نے یوپی انتخابات کے پانچویں مرحلے میں ووٹ ڈالنے کے بعد کہا کہ ہمیں 70 فیصد سے زیادہ ووٹنگ کی امید ہے۔ بڑے فرق سے جیتیں گے ہم اور 300 سے زیادہ سیٹوں کے ساتھ بی جے پی حکومت بنائے گی۔


      اتر پردیش میں آج ہونے والے پانچویں مرحلے کی ووٹنگ کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ اس مرحلے میں اودھ اور پوروانچل کے 12 اضلاع میں 61 سیٹیں داؤ پر لگی ہیں۔ یہ 12 اضلاع امیٹھی، سلطان پور، چترکوٹ، پرتاپ گڑھ، رائے بریلی، کوشامبی، پریاگ راج، بارہ بنکی، ایودھیا، بہرائچ، شراوستی اور گونڈہ ہیں۔ بھگوان رام کا شہر ایودھیا بھی ان 12 اضلاع میں شامل ہے، جہاں رام مندر کی تعمیر ایک بڑا مسئلہ ہے۔ یہاں بی جے پی کے لیے جیت کا چیلنج ہوگا۔ گزشتہ انتخابات میں تمام سیٹوں پر بی جے پی کا قبضہ تھا۔

      ایودھیا کو بی جے پی کا مضبوط گڑھ سمجھا جاتا ہے۔ 2017 میں یہاں بی جے پی کو بھاری اکثریت ملی تھی۔ بی جے پی کے سامنے چیلنج یہ ہے کہ وہ اپنی سابقہ ​​کارکردگی کو ایک بار پھر دہرائے۔ اس کے ساتھ ساتھ باقی ٹیمیں اپنی پرانی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لیے لڑ رہی ہیں۔ ایسے میں تمام پارٹیوں نے اپنے سابق فوجیوں کو میدان میں اتار دیا ہے۔ پانچویں مرحلے میں تمام جماعتوں کے سابق فوجیوں کی ساکھ داؤ پر لگ گئی ہے۔ ان اضلاع کے 2017 کے نتائج درج ذیل ہیں۔


       کون کون سے مرکزی چہرے ہیں میدان میں
      پانچویں مرحلے میں، اتر پردیش کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ اپنے آبائی ضلع کوشامبی کے سیراتھو اسمبلی حلقہ سے بی جے پی کے امیدوار ہیں، جن کے خلاف سماج وادی پارٹی نے اپنا دل (کمیونسٹ) لیڈر پلوی پٹیل کو میدان میں اتارا ہے۔ جہاں پلوی پٹیل کی بہن اور مرکزی حکومت کی وزیر انوپریا پٹیل کیشو پرساد موریہ کے حق میں مہم چلا رہی ہیں، وہیں انوپریا پٹیل کی ماں کرشنا پٹیل پرتاپ گڑھ صدر سے سماج وادی اتحاد کے امیدوار کے طور پر بی جے پی کا مقابلہ کر رہی ہیں۔ اس کے ساتھ ہی رگھوراج پرتاپ سنگھ، جو 1993 سے پرتاپ گڑھ ضلع کے کنڈا سے الیکشن جیت رہے ہیں، اس بار ان کی طرف سے بنائی گئی جن ستا پارٹی کی طرف سے روایتی سیٹ پر انتخابی میدان میں ہیں۔


      2017 میں کسے ملی کتنی سیٹیں؟
      امیٹھی میں بی جے پی کے 3 اور ایس پی کے 1 امیدوار نے 4 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی۔ سلطان پور میں بی جے پی کو 4 اور ایس پی کو 5 سیٹوں میں سے 1 سیٹ ملی۔ چترکوٹ میں بی جے پی نے 2 سیٹیں جیتی ہیں۔ پرتاپ گڑھ کی کل 7 سیٹوں میں سے بی جے پی نے 2، AD(S) 2، کانگریس نے 1 اور IND نے 2 سیٹیں جیتیں۔ بی جے پی نے کوشامبی میں کل 3 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ پریاگ راج کی 12 سیٹوں میں سے بی جے پی کو 8، بی ایس پی کو 2، ایس پی کو 1 اور اے ڈی (ایس) کو 1 سیٹ ملی۔ بارہ بنکی کی کل 6 سیٹوں میں بی جے پی کو 5 اور ایس پی کو 1 سیٹ ملی۔ ایودھیا میں بی جے پی نے کل 5 سیٹیں جیتی ہیں۔ بہرائچ کی کل 7 سیٹوں میں سے بی جے پی کو 6 اور ایس پی کو 1 سیٹ ملی۔ شراوستی کی کل 2 سیٹوں میں سے بی جے پی کو 1 اور بی ایس پی کو 1 پر کامیابی ملی۔ بی جے پی نے گونڈا میں 7 سیٹیں جیتی تھیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: