ہوم » نیوز » وطن نامہ

یورپی پارلیمنٹ میں سی اےاے کے خلاف قراردادپر اوم برلا نے ظاہر کیا اعتراض ، اپنے ہم منصب کو لکھا خط

لوک سبھا اسپیکر اوم برلا (Om Birla) نے شہریت ترمیمی قانون سی اے اے(CAA) کے خلاف یورپی پارلیمنٹ(European Parliament) میں قرارداد پیش کئے جانے پر سخت اعتراض ظاہر کیا ہے۔

  • Share this:
یورپی پارلیمنٹ میں سی اےاے کے خلاف قراردادپر اوم برلا نے ظاہر کیا اعتراض ، اپنے ہم منصب کو لکھا خط
لوک سبھا اسپیکر اوم برلا (Om Birla) نے شہریت ترمیمی قانون سی اے اے(CAA) کے خلاف یورپی پارلیمنٹ(European Parliament) میں قرارداد پیش کئے جانے پر سخت اعتراض ظاہر کیا ہے۔

نئی دہلی: لوک سبھا اسپیکر اوم برلا  (Om Birla) نے شہریت ترمیمی قانون سی اے اے(CAA) کے خلاف  یورپی پارلیمنٹ(European Parliament) میں  قرارداد پیش کئے جانے پر سخت اعتراض ظاہر کیا ہے۔ انہوں نے پیر کو یوروپی یونین کے قانون ساز ادارہ کے سربراہ کو بتایا کہ کسی قانون ساز کے لئے کسی دوسرے مقننہ کے بارے میں فیصلہ دینا نامناسب ہے۔ ساتھ ہی Add Newذاتی مفادات رکھنے والے افراد اس طرز عمل کو غلط استعمال کر سکتے ہیں۔

سی اے اے کے خلاف یورپی پارلیمنٹ میں مجوزہ بحث ووٹنگ  کے پس منظر میں نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو نے بھی کہا کہ ہندوستان کے داخلی معاملات میں بیرونی مداخلت کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ بی جے پی نے معاملے پر یورپی یونین کے پارلیمنٹ کے ممبروں کی غیر جانبداری پر سوال اٹھایا جبکہ کانگریس نے بھگوا جماعت پر شہریت کے معاملے کو بین الاقوامی بنانے کا الزام عائد کیا۔

دریں اثنا ، یورپی یونین کے بانی رکن ملک فرانس کا ماننا ہے کہ نیا شہریت قانون (سی اے اے) ہندوستان کا داخلی سیاسی موضوع ہے۔ فرانسیسی سفارتی ذرائع نے پیر کو یہ بات بتائی۔ 751 رکنی یورپی پارلیمنٹ میںتقریبا 600 اراکین پارلیمنٹ نے سی اے اے کے خلاف چھ قراردادپیش کیں ، جن میں کہا گیا ہے کہ اس قانون کا نفاذ ہندوستانی شہریت کے نظام میں ایک خطرناک تبدیلی کی عکاسی کرتا ہے۔

برلا نے پیر کو یوروپی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈیوڈ ماریا ساسولی کو ایک خط لکھا ، "میں سمجھتا ہوں کہ ہندستانی شہریت ترمیمی قانون، 2019 کو لیکر یوروپی پارلیمنٹ میں( 'Joint motion for resolution ' ) پیش کیا گیا ہے۔ اس قانون میں ہمارے پروسی نزدیکی پڑوسی ممالک میں مذہبی ظلم کا شکار ہوئے لوگوں کو آسانی سے شہریت دینے کا قرارداد ہے۔

First published: Jan 28, 2020 07:20 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading