உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Gyanvapi Mosque کے بعد اب متھرا کے شاہی عیدگاہ کو سیل کرنے کیلئے کورٹ میں دائرل ہوئی عرضی

    Gyanvapi Mosque کے بعد اب متھرا کے شاہی عیدگاہ کو سیل کرنے کیلئے کورٹ میں دائرل ہوئی عرضی ۔ فائل فوٹو ۔

    Gyanvapi Mosque کے بعد اب متھرا کے شاہی عیدگاہ کو سیل کرنے کیلئے کورٹ میں دائرل ہوئی عرضی ۔ فائل فوٹو ۔

    Mathura Shahi Eidgah Masjid : عدالت کے حکم پر اتر پردیش کے وارانسی کی مشہور گیان واپی مسجد میں وضو خانہ کو سیل کرنے پر جاری تنازعہ کے درمیان اب متھرا کی مشہور شاہی عیدگاہ مسجد کو سیل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      متھرا : عدالت کے حکم پر اتر پردیش کے وارانسی کی مشہور گیان واپی مسجد میں وضو خانہ کو سیل کرنے پر جاری تنازعہ کے درمیان اب متھرا کی مشہور شاہی عیدگاہ مسجد کو سیل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ ایڈوکیٹ مہندر پرتاپ سنگھ نے متھرا سول جج سینئر ڈویژن کی عدالت میں درخواست دائر کی ہے، جس میں انہوں نے شاہی عیدگاہ پر سیکیورٹی بڑھانے، وہاں آنے جانے پر پابندی اور سیکیورٹی اہلکار تعینات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : Gyanvapi Mosque Survey: سپریم کورٹ پہنچا مسلم فریق، داخل کی عرضی، آج ہو سکتی ہے سماعت


      مہندر پرتاپ سنگھ نے اس درخواست میں گیان واپی مسجد تنازعہ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ وارنسی کی گیان واپی مسجد میں جس طرح سے ہندو شیولنگ کے باقیات ملے ہیں، اس سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ مدعا علیہان شروع سے ہی اسی وجہ سے مختلف کرتے رہے ہیں۔

      انہوں نے کہا کہ یہ صورت حال شری کرشن جنم بھومی پراپرٹی کی ہے، جو کہ اصلی گربھ گرہ ہے ۔ وہاں پر سبھی ہندو مذہبی آثار، کمل شیشناگ، اوم، سواستیکا وغیرہ ہندو مذہبی نشانات اور باقیات ہیں۔ اس میں سے کچھ کو مٹا دیا گیا ہے اور کچھ کو مدعا علیہ مٹانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ اس صورت حال میں اگر ہندوؤں کے باقیات کو تباہ کر دیا گیا ، تو کیریکٹر آف پراپرٹی بدل جائے گا اور سوٹ کا مقصد ختم ہوجائے گا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: درگاہ کے پاس ہنومان جی کی مورتی لگانے پر ہنگامہ، شرپسندوں نے کیا پتھراؤ، دفعہ 144 نافذ


      مہندر سنگھ نے یہ بھی کہا کہ معزز عدالت سے درخواست ہے کہ وہاں سبھی کے آنے جانے پر پابندی لگائی جائے اور اس احاطے کی مناسب حفاظت کے انتظامات کیے جائیں ورنہ احاطے کو سیل کر دیا جائے ۔

      بتا دیں کہ متھرا میں شاہی عیدگاہ اور شری کرشن جنم بھومی کو لے کر کافی عرصے سے تنازع چل رہا ہے اور اس معاملہ کی سماعت وہاں کی سول کورٹ میں چل رہی ہے۔ ایسے میں مانا جا رہا ہے کہ سول جج سینئر ڈویژن کی عدالت مہندر پرتاپ کی اس درخواست پر سماعت کر سکتی ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: