உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Big News: ریتا بہوگنا جوشی کے بیٹے مینک جوشی ہوں گے ایس پی میں شامل! اکھلیش نے شیئر کی تصویر

    Uttar Pradesh Assembly Elections 2022 : اترپردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری گھمسان کے درمیان ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی کے بیٹے مینک جوشی جلد ہی سائیکل کی سواری کرنے والے ہیں ۔

    Uttar Pradesh Assembly Elections 2022 : اترپردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری گھمسان کے درمیان ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی کے بیٹے مینک جوشی جلد ہی سائیکل کی سواری کرنے والے ہیں ۔

    Uttar Pradesh Assembly Elections 2022 : اترپردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری گھمسان کے درمیان ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی کے بیٹے مینک جوشی جلد ہی سائیکل کی سواری کرنے والے ہیں ۔

    • Share this:
      لکھنو : اترپردیش اسمبلی انتخابات کو لے کر جاری گھمسان کے درمیان ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی کے بیٹے مینک جوشی (Mayank Joshi) جلد ہی سائیکل کی سواری کرنے والے ہیں ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی (Rita Bahuguna Joshi) کے بیٹے مینک جوشی (Mayank Joshi to Join SP)  نے آج یعنی منگل کو سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھیلیش یادو سے ملاقات کی ۔ بتایا جارہا ہے کہ مینک جوشی سماجوادی پارٹی میں شامل ہوں گے ۔ بتادیں کہ ریتا بہوگنا جوشی کی فریاد کے بعد بھی بی جے پی نے مینک جوشی کو لکھنو کینٹ سے ٹکٹ نہیں دیا تھا ۔

      لکھنو میں کل ہونے والی ووٹنگ سے پہلے مینک جوشی کا اکھیلیش یادو سے ملنا بڑی سیاسی ہلچل کا اشارہ ہے ۔ مینک جوشی کو لے کر کافی وقت پہلے سے خبر تھی کہ وہ ایس پی میں شامل ہوں گے ۔ اترپردیش کی ہائی پروفائل لکھنو کینٹ سیٹ سے بی جے پی نے ریاستی وزیر برجیش ٹھاکر کو امیدوار بنایا ہے ۔ اس سیٹ سے اپرنا یادو اور مینک جوشی دونوں ٹکٹ پانے کی امید کررہے تھے ۔

      یہ پارٹی کیلئے محفوظ سیٹ مانی جاتی ہے ۔ لکھنو کینٹ سیٹ سے ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی اپنے بیٹے کیلئے ٹکٹ مانگ رہی تھیں ۔ بی جے پی ممبر پارلیمنٹ ریتا بہوگنا جوشی نے یہاں تک کہا تھا کہ وہ ( بیٹے مینک جوشی) 2009 سے کام کررہے ہیں اور انہوں نے اس کیلئے ( لکھنو کینٹ سے ٹکٹ) درخواست دی ہے ، لیکن اگر پارٹی نے فی کنبہ صرف ایک شخص کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے تو مینک کو ٹکٹ ملنے پر میں اپنی موجودہ لوک سبھا سیٹ سے استعفی دے دوں گی ۔

      دراصل لکھنو کینٹ سیٹ سے ٹکٹ نہیں ملنے کے بعد سے ہی مینک جوشی بی جے پی سے ناراض چل رہے ہیں ۔ حالانکہ ابھی ایس پی میں شامل ہونے کا آفیشیل اعلان نہیں ہوا ہے ۔ صرف ایس پی سربراہ اکھیلیش یادو نے ان کی تصویر شیئر کی ہے اور رسمی ملاقات کی بات کی ہے ۔ لکھنو کی نو اسمبلی سیٹوں میں سے آٹھ  پر بی جے پی نے پچھلی مرتبہ الیکشن میں جیت درج کی تھی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: