ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اترپردیش : مساجد میں چلنے والے بچوں کے دینی مکاتب کو شروع کرنے کی اجازت دینے کا مطالبہ

شہر کے معروف دینی ادارے جامعہ امامیہ انوارالعلوم کے ترجمان جاوید رضوی کراروی کا کہنا ہے کہ بازار ، پارک ، سنیما ہال اور دیگر تفریحی سرگرمیاں چلانے کے لئے حکومت نے اجازت دے رکھی ہے ، ایسے میں صرف چھوٹے بچوں کی دینی تعلیم پرروک لگانا مناسب نہیں ہے ۔

  • Share this:
اترپردیش : مساجد میں چلنے والے بچوں کے دینی مکاتب کو شروع کرنے کی اجازت دینے کا مطالبہ
اترپردیش : مساجد میں چلنے والے بچوں کے دینی مکاتب کو شروع کرنے کی اجازت دینے کا مطالبہ

الہ آباد : اترپردیش کی مساجد میں نماز باجماعت  ادا کرنے کی  مشروط اجازت ریاستی حکومت نے پہلے ہی دے رکھی ہے ۔ لیکن بعض مسجدوں میں چلنے والے بچوں کے دینی مکاتب کی اجازت مقامی انتظامیہ کی طرف سے ابھی تک نہیں دی گئی ہے ۔ مسجدوں میں لگنے والے مکاتب میں تعلیم نہ شروع ہونے سے بچے بنیادی دینی تعلیم سے محروم ہو رہے ہیں ۔ یو پی کی تمام مسجدوں میں کورونا ضابطے کی پابندی کرتے ہوئے نماز با جماعت کا اہتمام اب مستقل ہونے لگا ہے ۔


ریاستی حکومت نے سماجی فاصلوں اور کورونا گائیڈ لائنس کی پابندی کے ساتھ مسجدوں میں نماز ادا  کرنے کی اجازت دے رکھی ہے ۔ لیکن مسجدوں میں لگنے والے دینی مکاتب کی اجازت مقامی انتظامیہ کی طرف سے ابھی تک نہیں دی  گئی ہے ۔ مسجدوں میں لگنے والے مکاتب میں بچوں کو ناظرہ قرآن اور اردو کی بنیادی  تعلیم  روایتی طور سے مفت دی جاتی  ہے ۔ دینی مدارس کے ذمہ داران نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ مساجد میں مکتب کی تعلیم  از سر نو شروع کرنے کی  اجازت دی جائے ۔


شہر کے معروف دینی ادارے جامعہ امامیہ انوارالعلوم کے ترجمان جاوید رضوی کراروی کا کہنا ہے کہ  بازار ، پارک ، سنیما ہال اور دیگر تفریحی سرگرمیاں چلانے کے لئے حکومت نے اجازت دے رکھی  ہے ، ایسے میں صرف چھوٹے بچوں کی دینی تعلیم پرروک لگانا مناسب نہیں ہے ۔


گرچہ مسجدوں میں چلنے والے دینی مکاتب کو بند رکھنے کا کوئی تحریری حکم نامہ انتظامیہ نے جاری نہیں کیا ہے ۔ تاہم  مقامی انتظامیہ کی جانب سے مساجد میں قائم انتظامیہ کمیٹیوں کے ذمہ داران کو زبانی طور سے بچوں کے مکاتب فی الحال شروع نہ کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 19, 2021 05:52 PM IST