کملیش تیواری قتل معاملہ: ملزم اشفاق کا آڈیو وائرل، قتل کے بعد بیوی اور والد سے کی تھی بات

آڈیو میں اشفاق کو اپنی بیوی اور والد کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ وہ شاہجہاں پور میں ٹھہرا ہوا ہے۔

Oct 24, 2019 01:04 PM IST | Updated on: Oct 24, 2019 03:41 PM IST
کملیش تیواری قتل معاملہ: ملزم اشفاق کا آڈیو وائرل، قتل کے بعد بیوی اور والد سے کی تھی بات

کملیش تیواری قتل معاملے سے متعلق ایک آڈیو کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ یہ آڈیو کملیش تیواری کے قتل کے الزام  میں گرفتار اشفاق کا ہے۔

قتل کی واردات کو انجام دینے کے بعد فرار کے دوران کا یہ آڈیو لگ رہا ہے۔ آڈیو میں اشفاق کو اپنی بیوی اور والد کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ وہ شاہجہاں پور میں ٹھہرا ہوا ہے۔ وائرل آڈیو میں ملزم اشفاق شاہجہاں پور سے لکھنؤ جانے کی بات کہہ رہا ہے لیکن اس کے والد سمجھا رہے ہیں کہ گجرات اے ٹی ایس سے ہماری بات ہوگئی ہے۔ سب پروسیزر ہو گیا ہے۔ تم یہاں آجاؤ۔

اشفاق کے والد کے مطابق پولیس سپرنٹنڈنٹ (ایس پی ) نے کہا کہ اسے بس سورت بلالو۔ اس آڈیو سے لگ رہا ہے کہ قتل کے ملزموں کا کنبہ گجرات اے ٹی ایس کے رابطے میں تھا۔ اب ویڈیو کی بنیاد پر لوگوں کا کہنا ہے کہ اشفاق کے اہل خانہ کو بھی اس بات کا خوف تھا کہ یوپی میں اشفاق کو مار دیا جاسکتا ہے۔ لہذا اشفاق کی بیوی اور اس کے والد اسے کسی بھی طرح گجرات لانا چاہتے تھے۔  ایسےمیں اب سوال اٹھ رہا ہے کہ کملیش تیواری قتل معاملے کے ملزموں کی گرفتاری مینیج ہے یا پھر یہ ان کا سرینڈر تھا۔

بتادیں کہ  ہندو سماج پارٹی کے قومی صدر کملیش تیواری کے قتل کے چار دن بعد گجرات اے ٹی ایس نے دونوں اہم ملزمان کو راجستھان سرحد کے شاملجی سے گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس اور اے ٹی ایس نے دعویٰ کیا ہے کہ شیخ اشفاق حسین اور پٹھان معین الدین احمد سے ہوئی پوچھ گچھ میں ان دونوں اہم ملزمان نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔

Loading...

پولیس کے مطابق، گرفتار قاتلوں میں اشفاق نے کملیش پر چاقو سے کئی حملے کیے اور پھر بے رحمی سے اس کا گلا کاٹ دیا تھا۔ گلا ریتنے کے دوران اس کا بھی ہاتھ  غلطی سے زخمی ہوگیا تھا۔ دوسرے اہم ملزم معین الدین کے بارے میں بتایا کہ اس نے کملیش کو گولی ماری تھی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گجرات کے سورت سے گرفتار تین سازش رچنے والوں راشد پٹھان، مولانا محسن اور فیضان نے ہی دونوں کا برین واش کر کے انہیں قتل کے لیے تیار کیا تھا۔ اے ٹی ایس کے ڈی آئی جی نے بتایا کہ دونوں ہی اہم ملزمین تینوں سازش رچنے والوں سے گزشتہ ڈیڑھ سال سے رابطے میں تھے، لیکن انھوں نے کبھی فون پر بات نہیں کی۔

Loading...