உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UP Elections 2022: آیوش وزیر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی کا استعفی ، الیکشن سے پہلے بی جے پی کو لگا 14واں جھٹکا

    UP Elections 2022: آیوش وزیر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی کا استعفی ، الیکشن سے پہلے بی جے پی کو لگا 14واں جھٹکا

    UP Elections 2022: آیوش وزیر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی کا استعفی ، الیکشن سے پہلے بی جے پی کو لگا 14واں جھٹکا

    اترپردیش اسمبلی انتخابات (UP Election 2022) کا سنگرام شروع ہونے سے پہلے پارٹی بدلنے کی سیاست شباب پر ہے ۔ اس درمیان بی جے پی کے ممبر اسمبلی اور آیوش وزیر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی ( Dharam Singh Saini) کے استعفی سے ہنگامہ مچ گیا ہے ۔

    • Share this:
      لکھنو : اترپردیش اسمبلی انتخابات  (UP Election 2022) کا سنگرام شروع ہونے سے پہلے پارٹی بدلنے کی سیاست شباب پر ہے ۔ اس درمیان بی جے پی کے ممبر اسمبلی اور آیوش وزیر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی ( Dharam Singh Saini) کے استعفی سے ہنگامہ مچ گیا ہے ۔ اس کے ستھ ہی یوپی کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے کہا کہ 'سماجی انصاف' کیلئے لڑنے والے ایک اور لیڈر ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی جی کے آنے سے 'سب کا میل ملاپ۔ملن' کرانے والی ہماری مثبت سیاست کو مزید جوش و توانائی ملی ہے ۔ ایس پی میں ان کا احترام کے ساتھ خیرمقدم ۔ بتادیں کہ اب تک بی جے پی کے تین وزرا اور گیارہ ممبران اسمبلی استعفی دے چکے ہیں، جس میں سوامی پرساد موریہ اور دارا سنگھ چوہان جیسے بڑے نام بھی شامل ہیں۔

      ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی نے اپنے استعفی میں لکھا : میں نے آیوش وزیر (آزادانہ چارج) کے طور پر اپنی ذمہ داریوں کو لگن کے ساتھ نبھایا، لیکن جن توقعات کے ساتھ دلتوں، پچھڑوں ، کسانوں، تعلیم یافتہ بے روزگاروں، چھوٹے اور متوسط ​​طبقے کے تاجروں نے مل کر بی جے پی کی واضح اکثریت کے ساتھ حکومت بنانے کا کام کیا ، ان کے اور ان کے عوامی نمائندوں کی تئیں لگاتار ہورہے نظر انداز کرنے کے رویہ کی وجہ سے میں یوپی کابینہ سے استعفیٰ دیتا ہوں ۔



      قابل ذکر ہے کہ دھرم سنگھ سینی 2002 میں سرساوا سیٹ سے بی ایس پی کے ٹکٹ پر پہلی مرتبہ ممبر اسمبلی بنے تھے ۔ اس کے بعد 2007 میں دوبارہ سرساوا سے بی ایس پی کے ٹکٹ پر ممبر اسمبلی بنے اور بی ایس پی حکومت میں کابینہ وزیر ( بنیادی تعلیم کے وزیر) رہے ۔ اس کے بعد 2012 میں تیسری مرتبہ بی ایس پی کے ٹکٹ پر ہی نکوڑ سے ممبر اسبملی بنے اور پبلک اکاونٹس کمیٹی کے چیئرمین رہے ۔

      اس کے بعد 2017 میں انہوں نے بی جے پی کا دامن تھام لیا اور نکوڑ سے ممبر اسبملی بنے ۔ وہیں بی جے پی نے ان کو آیوش وزیر کے عہدہ سے نوازا تھا ۔ اس مرتبہ وہ پارٹی بدل کر سماجوادی پارٹی میں شامل ہوگئے ہیں ۔ ذرائع کی مانیں تو وہ گزشتہ کافی عرصہ سے سماجوادی پارٹی کے سربراہ اور یوپی کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے رابطے  میں تھے ۔


      بی جے پی چھوڑنے والے ممبران اسمبلی کی فہرست

      1. سوامی پرساد موریہ

      2. بھگوتی ساگر

      3. روشن لال ورما

      4. ونے شاکیا

      5. اوتار سنگھ بھڈانہ

      6. دارا سنگھ چوہان

      7. برجیش پرجاپتی

      8. مکیش ورما

      9. راکیش راٹھور

      10. جئے چوبے

      11. مادھوری ورما

      12. آر کے شرما

      13. بالا پرساد اوستھی

      14. ڈاکٹر دھرم سنگھ سینی۔

      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: