உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    UP Election: بی جے پی لیڈر اور پہلوان ببیتا پھوگاٹ کی کار پر حملہ، جانئے پورا معاملہ

    UP Election: بی جے پی لیڈر اور پہلوان ببتا پھوگاٹ کی کار پر حملہ، جانئے پورا معاملہ

    UP Election: بی جے پی لیڈر اور پہلوان ببتا پھوگاٹ کی کار پر حملہ، جانئے پورا معاملہ

    Babita Phogat News : اترپردیش اسمبلی انتخابات (UP Election 2022) کے دوران بی جے پی لیڈر اور پہلوان ببیتا پھوگاٹ کی گاڑی پر حمل ہونے کی خبر سامنے آئی ہے۔

    • Share this:
      میرٹھ : اترپردیش اسمبلی انتخابات (UP Election 2022) کے دوران بی جے پی لیڈر اور پہلوان ببیتا پھوگاٹ کی گاڑی پر حمل ہونے کی خبر سامنے آئی ہے۔ بی جے پی لیڈر نے نیوز ایجنسی اے این آئی کو بتایا کہ یوپی کے میرٹھ میں انتخابی مہم کے دوران ان کی کار پر کچھ شرپسندوں نے حملہ کردیا۔ وہیں اس معاملہ کو لے کر پولیس میں شکایت بھی دی گئی ہے۔

      جانکاری کے مطابق یہ واقعہ میرٹھ کے سول خاص اسمبلی حلقہ میں دبتھوا گاوں میں پیش آیا ہے ۔ دراصل ببیتا پھوگاٹ بی جے پی امیدوار مندر پال سنگھ کے حق میں مانگ رہی تھیں ، تبھی آر ایل ڈی حامیوں نے لاٹھی ڈنڈے لے کر بی جے پی کی مخالفت میں نعرے بازی شروع کردی ۔ اس کے بعد بی جے پی کارکنان نے مخالفت  کی تو انہوں نے  حملہ کردیا ۔


      اس واقعہ میں بی جے پی کے کئی کارکنان کے زخمی ہونے کی خبر ہے ۔ وہیں ببیتا پھوگاٹ نے الزام لگایا ہے کہ اس دوران آر ایل ڈی حامیوں نے خواتین سے بھی بدسلوکی کی اور میری گاڑی پر حملہ کردیا ۔ اس وجہ سے کار کو کافی نقصان ہوا ہے ۔

      یہی نہیں اس واقعہ کو لے کر بی جے پی کارکنان نے فائرنگ کرنے کا بھی الزام لگایا ہے جبکہ واقعہ کو لے کر سردھنا تھانہ میں تحریر دینے کی تیاری کی جارہی ہے ۔ وہیں اطلاع ملنے کے بعد جائے واقعہ پر پہنچی پولیس نے بی جے پی کسان مورچہ کے منڈل کے صدر ستیندر چودھری کو علاج کیلئے سی ایچ سی میں بھرتی کرایا ہے ۔

      حالانکہ پولیس انسپکٹر دیہات کیشو کمار نے فائرنگ کے واقعہ سے انکار کیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: