உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Meerut News : وقف منصبیہ پر لٹکی جانچ کی تلوار ، کیٹیگری تبدیل ہونے پر اٹھے سوال 

    Meerut News : وقف منصبیہ پر لٹکی جانچ کی تلوار ، کیٹیگری تبدیل ہونے پر اٹھے سوال 

    Meerut News : وقف منصبیہ پر لٹکی جانچ کی تلوار ، کیٹیگری تبدیل ہونے پر اٹھے سوال 

    Meerut News : یو پی شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے چیئرمین علی زیدی نے وقف بورڈ انسپکٹر منتظر مہدی کو معطل کر دیا ہے ۔ منتظر مہدی پر عہدے پر رہتے ہوئے متولیوں کو ناجائز فائدہ پہنچانے کا الزام ہے ۔

    • Share this:
    میرٹھ : یو پی شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے چیئرمین علی زیدی نے وقف بورڈ انسپکٹر منتظر مہدی کو معطل کر دیا ہے ۔ منتظر مہدی پر عہدے پر رہتے ہوئے متولیوں کو ناجائز فائدہ پہنچانے کا الزام ہے ۔ منتظر مہدی پر الزام ہے کہ عہدے کا غلط استعمال کرتے ہوئے مہدی نے کئی اوقاف کے زمرے میں تبدیلی کی اور تولیت کے لیے متولیوں کو فائدہ پہنچانے کا کام کیا ۔ بورڈ اب ان کی آمدنی سے زیادہ جائیداد کی بھی جانچ کروانے کی تیاری کر رہا ہے ۔ وقف بورڈ  کے مطابق مہدی نے میرٹھ کی وقف منصبیہ کی کیٹیگری کو وقف الخیر سے الاولاد میں تبدیل کیا ۔

     

    یہ بھی پڑھئے : دہلی میں جماعت اسلامی ہند کی پریس کانفرنس، Target Killing کی مذمت کی


    میرٹھ کی ہی وقف محمد شفیع محمد ممتاز حسین میں بھی مہدی نے یہی کام کیا اور غلط حقائق پر مبنی رپورٹ بورڈ میں پیش کرکے ان کی کیٹیگری کو بدل کر متولیوں کو فائدہ پہنچایا ۔ اس معاملے میں بورڈ نے کارروائی کرتے ہوئے منتظر مہدی کو معطل کر دیا ہے اور ان کی آمدنی سے زیادہ جائیداد کی جانچ کسی سرکاری ایجنسی سے کرانے کی بات کہی ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے : Hajj 2022: کوچی امبارکیشن پوائنٹ سے ہندوستانی عازمین حج کی پہلی پرواز روانہ


    وہیں وفق منصبیہ میرٹھ کے متولی شعیب جعفر کا کہنا ہے کہ وقف انسپکٹر کو معطل کرنا بورڈ کا اپنا فیصلہ ہے، لیکن جہاں تک بات وقف منصبیہ کی ہے، تو یہاں متولی کا انتخاب واقف کی منشاء کے مطابق ہے۔ تاہم اگر اس معاملے میں بورڈ کی جانب سے کوئی کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے، تو اس کو کورٹ میں چیلنج کیے جانے كا راستہ کھلا ہے ۔

    اب دیکھنا یہ ہے کہ وقف کیٹیگری کو تبدیل کرنے کا یہ معاملہ وقف انسپکٹر کی معطلی تک محدود رہتا یہ پھر معاملہ کی جانچ کے بعد اس کارروائی کا کوئی مثبت نتیجہ بھی سامنے آتا ہے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: