உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Google میں کام کرنے والا شخص ماڈلس سے منگواتا تھا نیوڈ فوٹوز ، پھر انوکھے طریقہ سے کرتا تھا بلیک میل

    Google میں کام کرنے والا شخص ماڈلس سے منگواتا تھا نیوڈ فوٹوز ، پھر انوکھے طریقہ سے کرتا تھا بلیک میل

    Google میں کام کرنے والا شخص ماڈلس سے منگواتا تھا نیوڈ فوٹوز ، پھر انوکھے طریقہ سے کرتا تھا بلیک میل

    گوگل میں سافٹ ویئر انجینئر کی پوسٹ پر کام کرنے والا شخص پہلے ماڈلوں سے نیوڈ فوٹو منگواتا تھا ، جس میں چہرہ نظر نہیں آرہا ہو ۔ ایسی تصویر سے ماڈل کو شروع میں اعتراض میں نہیں ہوتا تھا اور وہ فیشن ماڈلنگ میں کریئر بنانے کی خاطر تصاویر بھیج دیتی تھیں ۔ اس کے بعد ملزم کا اصلی کھیل شروع ہوتا تھا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : گوگل میں کام کرنے والا ایک شخص لڑکیوں کو بلیک میل کرنے کا انوکھا طریقہ اپناتا تھا ۔ گوگل میں سافٹ ویئر انجینئر کی پوسٹ پر کام کرنے والا شخص پہلے ماڈلوں سے نیوڈ فوٹو منگواتا تھا ، جس میں چہرہ نظر نہیں آرہا ہو ۔ ایسی تصویر سے ماڈل کو شروع میں اعتراض میں نہیں ہوتا تھا اور وہ فیشن ماڈلنگ میں کریئر بنانے کی خاطر تصاویر بھیج دیتی تھیں ۔ اس کے بعد ملزم کا اصلی کھیل شروع ہوتا تھا ۔

      میڈیا رپورٹس کے مطابق نوئیڈا میں رہنے والا 33 سال کا موہت شرما گوگل میں سافٹ ویئر انجینئر ہے ۔ وہ خود کو ایک رشین فیشن میگزین کا ایڈیٹر بتاکر لڑکیوں سے رابطہ کرتا تھا ۔ موہت کی بلیک میلنگ کا شکار ہوئی ایک لڑکی نے جب پولیس میں شکایت کی تو یہ معاملہ سامنے آیا ۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : بہو کو لینے مائیکے گئی ساس، پھر ہوگیا جھگڑا، سسرال والوں نے پرائیویٹ پارٹ میں ڈال دی مرچی


      پولیس کے مطابق ملزم نابالغ لڑکیوں کو اپنا شکار بناتا تھا ۔ اس کے پاس سے بڑی تعداد میں قابل اعتراض تصاویر ملی ہیں ۔ ملزم نوئیڈا سیکٹر 82 میں رہتا تھا اور گوگل میں مارکیٹ اینالسٹک کے طور پر کام کرتا تھا ۔ اس کے پاس میکینکل انجینئرنگ میں بی ٹیک اور بزنس مینجمنٹ میں پوسٹ گریجویشن کی ڈگری ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : طلاق لینے کیلئے شوہر نے پار کی ساری حدیں، بیوی کے سامنے ہی نرس سے بنائے جسمانی تعلقات


      پولیس نے بتایا کہ اسپیشل سیل کی انٹلی جنس فیوزن اور اسٹریٹجک آپریشن ٹیم کو ایک لڑکی نے شکایت کی کہ اس کی نیوڈ فوٹوز سوشل میڈیا سائٹ انسٹاگرام پر پوسٹ کی گئی ہے ۔ متاثرہ لڑکی نے بتایا کہ موہت شرما خود کو ایک رشین فیشن میگزین کا ایڈیٹر بتاتا تھا اور ان سے نیوڈ تصویریں مانگتا تھا ۔ حالانکہ تصویروں میں چہرا چھپا کر رکھنے کیلئے کہا گیا تھا ۔ متاثرہ میں کچھ نابالغ بھی شامل ہیں ۔

      ملزم متاثرہ لڑکیوں سے نئی نیوڈ تصویریں شیئر کرنے کیلئے کہتا تھا اور منع کرنے پر پہلے شیئر کی گئی تصویریں ان کے دوستوں اور رشتہ داروں کو شیئر کرنے کی دھمکی دیتا تھا ۔ ملزم نے متاثرین کی انسٹاگرام پروفائل تصویروں کا بھی استعمال کیا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: